اسد رؤف، 15پاکستانی سٹے بازوں کے خلاف چارج شیٹ

Image caption ممبئی پولیس نے پاکستانی امپائر اسد رؤف کو آئی پی ایک سٹے بازی معاملے میں ملزم قرار دیا ہے

انڈین پریمیئر لیگ (آئی پی ایل) میں سٹے بازی کے معاملے میں ممبئی پولیس نے سنیچر کو پاکستانی امپائر اسد رؤف سمیت 22 لوگوں کے خلاف سیشن کورٹ میں چارج شیٹ داخل کر دی ہے۔

ممبئی سے صحافی اشون ادھور نے بی بی سی کو بتایا کہ ساڑھے گیارہ ہزار صفحات کی اس چارج شیٹ میں پاکستانی امپائر اسد رؤف کے علاوہ وہاں کے 15 سٹے بازوں کے نام بھی شامل ہیں۔

چارج شیٹ میں چنئی سپر کنگز کے ’سابق مالک‘ گروناتھ ميپپن کے علاوہ بالی وڈ اداکار وندو دارا سنگھ کو بھی ملزم بنایا گیا ہے۔

اس معاملے میں مقدمے کی سماعت 21 نومبر کو ہونی ہے۔

سرکاری وکیل کرن بنڈیبھر کے مطابق اس معاملے میں کل 221 گواہوں کے بیانات درج کیے گئے ہیں۔ اس معاملے کے 22 ملزمان میں سے تین رمیش جیسوال ، ٹنكو اور جوپیٹر فی الحال پولیس کی حراست میں ہیں۔

بینڈیبھر کے مطابق ’پاکستانی امپائر اسد رؤوف اور 15 پاکستانی سٹے بازوں کو بھی ملزم بنایا گیا ہے۔‘

Image caption چنئی سوپر کنگس کے سابق مالک گروناتھ میپّن کے خلاف چارج شیٹ داخل کی گئی ہے

’ان بکیز پر الزام ہے کہ انہوں نے جعلی کاغذات کی بنیاد پر موبائل سم کارڈ حاصل کیے جن کا فکسنگ میں استعمال کیا گیا تھا۔ امپائر اسد رؤف، پون جے پور، سنجے جے پور اور 15 پاکستانی سٹے بازوں کو مطلوبہ ملزم بنایا گیا ہے۔ لیکن اس چارج شیٹ میں سپاٹ فکسنگ کا کوئی ذکر نہیں ہے۔‘

واضح رہے کہ آئی پی ایل کے 2013 ایڈیشن میں اسپاٹ فکسنگ کے الزامات اور سری سانت سمیت دو دیگر کھلاڑیوں کی گرفتاری سے مکمل ٹورنامنٹ تنازعات کا شکار ہو گیا تھا۔

دہلی پولیس نے 16 مئی کو راجستھان رائلز کے ایس شری سانت، اجیت چنڈيلا اور انکت چوہان اور 11 سٹے بازوں کو میچ فکسنگ کے الزام میں گرفتار کیا تھا۔ اس معاملے میں بی سی سی آئی کے صدر این شری نیواسن کے داماد گروناتھ ميپپن بھی شک کے دائرے میں آئے تھے ، ان کو بھی اس معاملے میں ملزم بنایا گیا ہے۔

گروناتھ ميپپن بیٹنگ یعنی جوئے کی بات تو تسلیم کر چکے ہیں لیکن وہ فکسنگ سے انکار کرتے ہیں۔

دہلی پولیس کے مطابق ان تین كھلاڑیوں نے سٹے بازوں کے ساتھ مل کر تین میچوں میں فکسنگ کی تھی، جن میں 5 مئی کو پونے واریئرز، 9 مئی کو کنگز الیون پنجاب اور 15 مئی کو ممبئی انڈینز کے خلاف کھیلے گئے میچ شامل تھے۔

اسی بارے میں