’ دوسرا‘ ہتھیار اب بھی موثر ہے: سعید اجمل

سعید اجمل
Image caption یو اے ای میں پہلے بھی ایک نمبر ون ٹیم کو ہرایا اب پھر ایک نمبر ون ٹیم کا سامنا ہے: سیعد اجمل

آف سپنر سعید اجمل کا کہنا ہے کہ انہوں نے 70 فیصد وکٹیں ’دوسرا‘ سے حاصل کی ہیں اور وہ اب بھی خود کو ایک موثر بولر سمجھتے ہیں اور اپنی کارکردگی سے مطمئن ہیں۔

سعید اجمل نے قومی تربیتی کیمپ کے دوران گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ اگر بلے باز ان کی بولنگ کو سمجھ چکے ہیں تو وہ ان کے توڑ کے لیے بھی مختلف ویری ایشین کے ذریعے کامیابی حاصل کرنے کی کوشش میں لگے رہتے ہیں۔

سعید اجمل نے اس تاثر کو غلط قرار دیا کہ اس سال ان کی کارکردگی یکساں نہیں رہی۔

انہوں نے کہا کہ وہ اس سال پانچ ٹیسٹ میچوں میں 25 وکٹیں حاصل کرچکے ہیں، اس کے علاوہ ون ڈ ے انٹرنیشنل میں ان کی حاصل کردہ وکٹوں کی تعداد 37 ہے، اس کارکردگی کو کون خراب کہے گا؟

سعید اجمل نے کہا کہ گذشتہ سال پاکستان نے اُس وقت کی عالمی نمبر ایک ٹیم انگلینڈ کو متحدہ عرب امارات میں شکست دی تھی اور اب اس کا مقابلہ ایک بار پھر عالمی نمبر ایک ٹیم جنوبی افریقہ سے ہے ۔ وہ گذشتہ سال کی کارکردگی دوہرانے کی ہر ممکن کوشش کریں گے۔

واضح رہے کہ انگلینڈ کے خلاف تین ٹیسٹ میچوں کی سیریز میں سعید اجمل نے 24 وکٹیں حاصل کی تھیں اور مین آف دی سیریز قرار پائے تھے۔

سعید اجمل کی خواہش ہے کہ وہ جنوبی افریقہ کے خلاف سیریز میں بھی مین آف سیریز بنیں۔

انہوں نے کہا کہ کپتان مصباح الحق کی جانب سے ان پر ضرورت سے زیادہ اعتماد کرنے سے وہ خود پر کوئی دباؤ محسوس نہیں کرتے۔

انہوں نے کہا کہ پاکستانی بولنگ اٹیک جنوبی افریقہ کی 20 وکٹیں حاصل کرنے کی اہلیت رکھتا ہے، اور گذشتہ تین سالوں سے یہی ٹیم حریف کی 20ٹ 20 وکٹیں حاصل کرکے میچ جیت رہی ہے لہذا صرف ایک شکست کے بعد ٹیم اور اس کی بولنگ کے بارے میں منفی رائے قائم کرلینا درست نہیں۔

سعید اجمل نے کہا کہ پاکستانی ٹیم جنوبی افریقہ کے خلاف سیریز کی اہمیت سے بخوبی آگاہ ہے اور اس کی بھرپور تیاری کی جا رہی ہے اور انہیں یقین ہے کہ دونوں ٹیسٹ میچوں میں کارکردگی اچھی رہے گی۔

اسی بارے میں