بھارت:این سری نواسن کی کرکٹ بورڈ میں واپسی

Image caption سری نواسن کا شمار عالمی کرکٹ میں ایک طاقتور ترین شخص کے طور پر ہوتا ہے

بھارت کی سپریم کورٹ نے اپنے داماد کے میچ فکسنگ میں ملوث ہونے کے بعد بھارتی کرکٹ بورڈ کے صدر کے عہدے سے الگ ہونے والے این سری نواسن کو ان کے عہدے پر بحال کر دیا۔

گزشتہ ماہ بی سی سی آئی بورڈ کے سالانہ اجلاس میں این سری نواسن مسلسل تیسری بار بھارتی کرکٹ کنٹرول بورڈ کے صدر کے عہدے کے لیے منتخب ہوئے تھے۔

بھارتی کرکٹ بورڈ کے صدر عہدے سے الگ

عدالت نے سری نواسن کو انتخاب میں حصہ لینے کی اجازت تو دے دی تھی لیکن ساتھ ہی یہ بھی ہدایت دی تھی کہ اگلے حکم تک وہ عہدہ نہیں سنبھال سکتے۔

منگل کو عدالت کے دو رکنی بینچ کے ایک رکن جسٹس اے کے پٹنائیک کے فیصلے کے مطابق’سری نواسن کرکٹ بورڈ( بی سی سی آئی) کے صدر کا عہدہ سنبھال سکتے ہیں، لیکن ایک الگ پینل تشکیل دیا گیا ہے جو اس کیس میں تحقیقات کرے گا‘۔

سری نواسن پر کوئی الزام نہیں تھا لیکن ان کے داماد گروناتھ ميپّن کے میچ فکسنگ کے الزام میں گرفتار ہونے کے بعد انہیں کہا گیا تھا کہ وہ اپنے عہدے سے الگ ہو جائیں۔

گروناتھ ميپّن کو بعد میں ضمانت پر رہا کر دیا گیا تھا۔

این سری نواسن کو صدر کے طور پر باقاعدہ کام کاج کرنے سے علیحدہ ہونا پڑا تھا۔ اس دوران ان کی جگہ جگ موہن ڈالمیا بورڈ کی روزانہ کی ذمہ داریاں نبھا رہے تھے۔

سری نواسن کا شمار عالمی کرکٹ کی بااثر شخصیات میں ہوتا ہے۔

اسی بارے میں