’کرکٹ کی پتلونوں میں زِپوں پر پابندی عائد کردی گئی ہے‘

Image caption آئی سی سی کی جانب سے پتلونوں میں زِپوں پر پابندی عائد کردی گئی ہے: موسیٰ جی

جنوبی افریقہ کے کھلاڑی ڈو پلیسی کی جانب سے پاکستان کے خلاف دوسرے ٹیسٹ میچ میں اپنی پتلون کی زِپ سے گیند رگڑنے کے واقعے کے بعد یہ انکشاف ہوا ہے کہ آئی سی سی نے زِپ پر پابندی لگا دی ہے۔

یہ انکشاف جنوبی افریقہ کی ٹیم کے مینیجر محمد موسیٰ جی نے سنیچر کو میڈیا سے بات کرتے ہوئے کیا۔

’پتلونوں میں زِپ کا جہاں تک تعلق ہے مجھے نہیں معلوم کہ آپ سے کتنے صحافیوں کو یہ معلوم ہے کہ آئی سی سی کی جانب سے پتلونوں میں زِپوں پر پابندی عائد کردی گئی ہے۔ اور تمام ممالک کو 2015 تک کا وقت دیا گیا ہے کہ کھلاڑیوں کے لیے ایسی پتلونیں سلوائیں جس میں زِپیں نہ ہوں۔‘

انہوں نے مزید کہا کہ جہاں تک جنوبی افریقہ کے کرکٹ بورڈ کا تعلق ہے تو کھلاڑیوں کے لباس تیار کرنے والوں کو کہہ دیا گیا ہے کہ 2015 کی ڈیڈ لائن تک نئی کِٹ تیار کر کے دی جائیں۔

کرکٹ کی ویب سائٹ کرک انفو کے مطابق آئی سی سی کے اس قاعدے سے صاف ظاہر ہے کہ گیند کو زِپ سے رگڑنے کو کرکٹ کونسل سنجیدگی سے لے رہی ہے۔

واضح رہے کہ دبئی میں پاکستان اور جنوبی افریقہ کے درمیان جاری دوسرے ٹیسٹ میچ کے تیسرے روز جنوبی افریقہ کے کھلاڑی ڈو پلیسی کو ٹراؤزر کی زپ سے گیند کو رگڑتے ہوئے دکھایا گیا۔

اس پر فیلڈ امپائرز نے جنوبی افریقہ کے کپتان گریم سمتھ کو بلا کر تنبیہ کی اور گیند تبدیل کردی گئی اور اس کے ساتھ ساتھ پاکستان کو پانچ پینلٹی رنز بھی ایوارڈ کیے۔

میچ کے تیسرے روز کے اختتام پر میچ ریفری ڈیوڈ بون نے جنوبی افریقہ کے کھلاڑی ڈو پلیسی کو سمن کیا۔ ڈیوڈ بون نے ایک بیان میں کہا ’مسٹر ڈو پلیسی کے ساتھ بات چیت کرنے کے بعد ۔۔۔ ڈو پلیسی کی طرف سے گیند میں تبدیلی لانے کی یہ دانستہ کوشش نہیں تھی۔ میرے خیال میں ڈو پلیسی پر میچ فیس کا پچاس فیصد جرمانہ مناسب ہے۔‘

اسی بارے میں