اے بی ڈیویلیئرز کو راستہ دکھانے پر سہیل تنویر پر جرمانہ

Image caption آئی سی سی کے ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی کی رپورٹ میدان میں موجود امپائرز نے کی

پاکستان کرکٹ ٹیم کے فاسٹ بولر سہیل تنویر پر جنوبی افریقہ کے خلاف دوسرے ٹی ٹوئنٹی میچ میں کھلاڑیوں کے لیے وضع کیا گیا آئی سی سی کا ضابطہِ اخلاق کی خلاف ورزی کرنے پر میچ فیس کا دس فیصد جرمانہ کیا گیا ہے۔

میچ ریفری راجن مادو گالے نے جمعے کو دبئی میں کھیلے گئے سیریز کے دوسرے میچ میں سہیل تنویر پر وکٹ لینے کے بعد غیر موزوں انداز میں خوشی منانے کا الزام لگایا تو انہوں نے انضباطی سماعت کے بغیر ہی اس الزام اور سزا کو قبول کر لیا۔

یہ واقعہ اس وقت پیش آیا جب میچ کا اٹھارہواں اوور کرواتے ہوئے سہیل تنویر نے جب اے بی ڈویلیئرز کو آؤٹ کیا تو انہوں نے دونوں ہاتھوں سے بلے باز کو پویلین کی جانب جانے کا اشارہ کیا۔

آئی سی سی کے ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی کا الزام میدان میں موجود امپائرز احسن رضا، ضمیر حیدر اور تھرڈ امپائر شوزیب رضا نے لگایا۔

لیول ون کی تمام غلطیوں میں آئی سی سی ریفری میچ فیس کے پچاس فیصد تک جرمانہ کر سکتے ہیں اور ان کے فیصلے حتمی ہوتے ہیں۔

جنوبی افریقہ نے پاکستان کو دوسرے اور آخری ٹی ٹوئنٹی میچ میں چھ رنز سے شکست دے کر سیریز دو صفر سے جیت لی تھی۔

یاد رہے کہ پاکستان کی ٹیم جنوبی افریقہ کے خلاف متحدہ عرب امارات میں اگرچہ ٹیسٹ سیریز ایک ایک سے برابری پر ختم کرنے میں کامیاب رہی تھی لیکن ون ڈ ے میں اسے 1-4 سے جبکہ ٹی ٹوئنٹی میں 0-2 سے شکست کا سامنا کرنا پڑا۔

واضح رہے کہ پاکستان کو جنوبی افریقہ کے خلاف جو حالیہ ہزیمت اٹھانی پڑی ہے مبصرین کی نظر میں اس کی وجہ بیٹنگ رہی ہے تاہم بلے بازی کے شعبے میں کوئی تبدیلی نہیں کی گئی ہے اور ٹیم میں جو دو تبدیلیاں ہوئی ہیں وہ بالنگ کے شعبے میں ہے۔

پاکستانی کرکٹ ٹیم کو اس سیریز کے بعد دوبارہ جنوبی افریقہ کے ساتھ تین ون ڈے اور دو ٹی ٹوئنٹی میچ کھیلنا ہے۔

اسی بارے میں