سنچورین: آخری ایک روزہ میچ میں جنوبی افریقہ فاتح

Image caption جنوبی افریقی کپتان ڈی ویلیئرز 48 رنز پر ناٹ آؤٹ رہے

جنوبی افریقہ نے سیریز کے تیسرے اور آخری ایک روزہ میچ میں چار وکٹوں سے شکست دے دی ہے۔

سنچورین میں سنیچر کو کھیلے جانے والے میچ میں پاکستان نے جنوبی افریقہ کو فتح کے لیے 180 رنز کا ہدف دیا تھا جو اس نے انتالیسویں اوور میں چھ وکٹوں کے نقصان پر حاصل کر لیا۔

سنچورین میں پاکستان اور جنوبی افریقہ مدِمقابل: تصاویر

جنوبی افریقہ نے ٹاس جیت کر پاکستان کو پہلے بیٹنگ کرنے کی دعوت دی تو اس پاکستانی بلے باز ناکام رہے اور کپتان مصباح الحق کے علاوہ کوئی بھی جم کر نہ کھیل سکا۔

مصباح الحق نے 79 رنز بنائے اور ناٹ آؤٹ رہے۔ ان کے علاوہ عمر امین اور شعیب مقصود نے 25، 25 رنز بنائے۔

جنوبی افریقی باؤلرز میں سے فیلینڈر تین وکٹوں کے ساتھ سب سے کامیاب رہے جبکہ سوٹسوبے، میکلارن اور عمران طاہر نے دو، دو وکٹیں لیں۔

Image caption مصباح الحق ایک اینڈ پر جمے رہے لیکن دوسرے اینڈ سے وکٹیں گرتی رہیں

جواب میں جنوبی افریقہ نے ہاشم آملہ اور کپتان ابراہم ڈی ویلیئرز کی عمدہ بلے بازی کی بدولت یہ ہدف حاصل کر لیا۔

آملہ نے 41 رنز بنائے جبکہ ڈی ویلیئرز 48 رنز پر ناٹ آؤٹ رہے۔

پاکستان کی جانب سے سعید اجمل نے دو کھلاڑیوں کو آؤٹ کیا۔

پاکستان نے آخری میچ کے لیے ٹیم میں چار تبدیلیاں کی تھیں۔ اس میچ میں جنید خان، محمد حفیظ، شاہد آفریدی اور ناصر جمشید کو ٹیم میں شامل نہیں کیا گیا اور ان کی جگہ عمر امین، سہیل تنویر، اسد شفیق اور عبدالرحمان کو موقع دیا گیا ہے۔

اس شکست کے باوجود پاکستان یہ سیریز دو ایک سے جیت گیا ہے اور یہ تاریخ میں پہلا موقع ہے کہ پاکستانی ٹیم کسی ایک روزہ سیریز میں جنوبی افریقہ کو ہرانے میں کامیاب ہوئی ہے۔

سیریز کے ابتدائی دو میچوں میں سے کیپ ٹاؤن میں کھیلے گئے پہلے میچ میں پاکستان نے جنوبی افریقہ کو 23 رنز سے جبکہ پورٹ الزبتھ میں سنسنی خیز مقابلے کے بعد ایک رن سے ہرایا تھا۔

اسی بارے میں