آئی او سی نے نمائندہ فیڈریشنوں کی فہرست جاری کردی

Image caption پاکستان اولمپک رکنیت معطل ہونے کے خطرے سے دوچار ہے

انٹرنیشنل اولمپک کمیٹی (آئی او سی) نے پاکستان میں کھیلوں کی قومی فیڈریشنوں اور ان کے عہدیداران کی فہرست جاری کردی ہے۔

فہرست میں وہ قومی فیڈریشنیں اور ان کے عہدیداران شامل ہیں جنھیں ان کھیلوں کی انٹرنیشنل فیڈریشنیں تسلیم کرتی ہیں اور جن کا الحاق آئی او سی کی منظور شدہ پاکستان اولمپک ایسوسی ایشن سے ہے۔

اولمپک کمیٹی: پاکستان کی معطلی کی سفارش

اولپمک کمیٹی کی پاکستان کو پھر دھمکی

انٹرنیشنل اولمپک کمیٹی (آئی او سی) کی جانب سے حکومت پاکستان اور پاکستان اولمپک ایسوسی ایشن کو بھیجے گئے خط کے بارے میں پاکستان اولمپک ایسوسی ایشن کے صدر لیفٹیننٹ جنرل (ریٹائرڈ) عارف حسن نے بی بی سی کے نامہ نگار عبدالرشید شکور کو بتایا کہ انٹرنیشنل اولمپک کمیٹی میں یہ تاثر دینے کی کوشش کی گئی تھی کہ پاکستان میں صرف اور صرف کھیلوں کی متوازی فیڈریشنیں قائم ہیں اور حقیقی فیڈریشن کوئی بھی نہیں ہے۔

’جس کے بعد انٹرنیشنل اولمپک کمیٹی نے پاکستان میں ہر کھیل کی قومی فیڈریشن کی حقیقت کے بارے میں اس کھیل کی انٹرنیشنل فیڈریشن سے تصدیق کرانے کا فیصلہ کیا جس کے نتیجے میں ان فیڈریشنوں اور ان کے عہدیداروں کی فہرست جاری کردی گئی ہے۔‘

لیفٹیننٹ جنرل (ریٹائرڈ ) عارف حسن نے کہا کہ آئی او سی کے اس تازہ ترین اقدام سے پاکستان اولمپک ایسوسی ایشن کا موقف درست ثابت ہوگیا ہے کیونکہ فہرست میں یہ تمام وہی فیڈریشنیں ہیں جو پاکستان اولمپک ایسوسی ایشن کی جنرل کونسل کے اجلاس میں شرکت کرتی رہی ہیں۔

انٹرنیشنل اولمپک کمیٹی نے اپنے خط میں یہ بھی واضح کیا ہے کہ پاکستان اولمپک ایسوسی ایشن سے الحاق رکھنے والی ان فیڈریشنوں کی تفصیلات جاری ہونے کے بعد ضروری ہوگیا ہے کہ پاکستان اولمپک ایسوسی ایشن کو آزادانہ طور پر کام کرنے دیا جائے اس کا دفتر اسے واپس کیا جائے اور بینک اکاؤنٹ بھی اس کے حوالے کر دیا جائے۔

یاد رہے کہ سرکاری حمایت یافتہ پاکستان اولمپکس ایسوسی ایشن کے وجود میں آنے کے بعد انٹرنیشنل اولمپک کمیٹی کی منظور شدہ پاکستان اولمپک ایسوسی ایشن کو کام کرنے سے روک دیا گیا تھا اور اس کے اکاؤنٹس منجمد کرنے کے علاوہ اس کے عہدیداروں کو اولمپک ہاؤس سے باہر کر دیا گیا تھا۔

انٹرنیشنل اولمپک کمیٹی نے حکومت پاکستان کو یاد دلایا ہے کہ قومی سپورٹس پالیسی پر نظرثانی کے معاملے میں ہونے والی پیش رفت سے بھی اسے آگاہ کرے۔

پاکستان اولمپک ایسوسی ایشن کے معاملات میں سرکاری مداخلت پر پاکستان اپنی اولمپک رکنیت معطل ہونے کے خطرے سے دوچار ہے۔

اسی بارے میں