ایشز سیریز: ’انگلینڈ کو وائٹ واش کا سنگین خطرہ‘

Image caption ایشز سیریز میں آسٹریلیا کو ایک صفر کی برتری حاصل ہے

انگلینڈ کرکٹ ٹیم کے سابق کپتان مائیکل وان نے کہا ہے کہ دوسرے ٹیسٹ میں شرمناک کارکردگی کے بعد انگلینڈ کو ایشز سیزیز میں پانچ صفر کے وائٹ واش کا سنگین خطرہ ہے۔

مائیل وان کے مطابق انگلیڈ کی ٹیم گیند سے خوفزدہ دکھائی دیتی ہے اور یہی اصل پریشانی ہے۔

انگلینڈ کے سابق کپتان نے کہا کہ جس طرح انگلش ٹیم کھیل رہی ہے مجھے ایسا دکھائی نہیں دیتا کہ آسٹریلیا میں کھیلی جا رہی ایشز سیریز کا نتیجہ پانچ صفر کے علاوہ بھی کچھ اور ہو سکتا ہے۔

مائیکل وان اس بات پر فکر مند ہیں کہ آسٹریلیا کی اعلیٰ ترین تیز بولنگ کے سامنے انگلینڈ کی بیٹنگ بس دکھائی دیتی ہے اور اس میں مزاحمت کی کمی ہے۔

انھوں نے کہا کہ مجھے یاد نہیں پڑتا کہ سنہ 2007، 2006 میں جب انگلینڈ آسٹریلیا سے پانچ صفر سے ایشز سیریز ہارا تھا تو اس وقت بھی ان کی بیٹنگ اتنی بری نہیں تھی۔

سابق کپتان کے مطابق انھوں نے اس سے پہلے انگلینڈ کی اتنی بری کارکردگی نہیں دیکھی، یہ کسی بھی انگلینڈ ٹیم کی بد ترین کارکردگی ہے۔

خیال رہے کہ مائیکل وان کی قیادت میں سنہ 2005 کی ایشز سیریز میں انگلینڈ نے آسٹریلیا کو تین صفر سے شکست دی تھی۔

انگلینڈ اور آسٹریلیا کی اس جوابی ایشز سیریز میں آسٹریلیا کو ایک صفر کی برتری حاصل ہے۔

برسبین میں کھیلے گئے پہلے ایشز ٹیسٹ میں آسٹریلیا نے انگلینڈ کو 381 رنز سے شکست دی تھی اور اسے ایڈیلیڈ ٹیسٹ میں بھی شکست کا سامنا ہے۔

دوسری جانب انگلینڈ کے سابق بلے باز جیفری بوائے کاٹ کو یقین ہے کہ ایلسٹر کک کی قیادت میں انگلش ٹیم پہلے ہی سیریز ہار چکی ہے۔

انھوں نے 13 دسمبر سے پرتھ میں شروع ہونے والے تیسرے ٹیسٹ سے پہلے انگلینڈ ٹیم میں تبدیلیاں کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔

انھوں نے کہا کہ پرتھ ٹیسٹ میں ائین بیل کو بیٹنگ کے لیے تیسرے نمبر پر آنا چاہیے۔

ان کا کہنا تھا کہ انگلینڈ ایشز سیریز نہیں جیت سکتی کیونکہ وہ اچھا کھیل پیش نہیں کر رہی۔

اسی بارے میں