گریم سوان کا کرکٹ سے فوری ریٹائرمنٹ کا فیصلہ

Image caption گریم سوان نے انگلینڈ کے لیے 60 ٹیسٹ میچ کھیلے ہیں اور 255 وکٹیں لیں

انگلینڈ کے سپن بالر گریم سوان نے تمام قسم کی کرکٹ سے فوری ریٹائرمنٹ کا اعلان کر دیا ہے۔

34 سالہ گریم سوان نے آسٹریلیا میں جاری ایشز سیریز میں اب تک صرف سات وکٹیں لی ہیں۔

انگلینڈ کو اس سیریز میں شکست ہو چکی ہے اور سوان نے اعلان کیا ہے کہ وہ سیریز کے باقی میچوں میں حصہ نہیں لیں گے۔

انہوں نے انگلینڈ کے لیے 60 ٹیسٹ میچ کھیلے ہیں اور 255 وکٹیں لیں۔ 79 ایک روزہ میچوں میں ان کی 104 وکٹیں ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ ’لوگ ہمیشہ کہتے ہیں کہ کھلاڑیوں کو خود بخود پتا چل جاتا ہے کہ ریٹائر ہونے کا صحیح وقت کیا ہے۔ مجھے ایڈیلیڈ ٹیسٹ میں ایسا ہی محسوس ہوا۔‘

برطانوی اخبار’دی سن‘ میں اپنے ہفتہ وار کالم نے انہوں نے لکھا کہ ’جب اکتوبر میں ہم یہاں آئے تھے تو میرا خیال تھا کہ یہ انگلینڈ کے لیے میری آخری سیریز سو سکتی ہے۔ مگر چند ہفتے پہلے جب میں نے خود کو شیشے میں دیکھا تو مجھے معلوم ہوگیا کہ ایسا ہی ہے۔‘

’اب چونکہ یہ سیریز ہم جیت نہیں سکتے میں نے اپنا فیصلہ دو ٹیسٹ میچ قبل ہی کر لیا ہے۔‘

انگلینڈ کے سابق کپتان مائیکل وان نے ٹوئٹر پر کہا کہ سوان نے یہ فیصلہ بہت جلدی کر لیا ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ اتنے سال تک سوان کو پرفارم کرتے دیکھنے میں بہت مزہ آیا ہے۔ ’وہ بہترین طرز کے فنگر سپنر ہیں۔‘

مائیکل وان کا کہنا تھا کہ ’سوان کے پائے کے سپنرز بہت نایاب ہیں اور گذشتہ 20 سال میں انگلینڈ کی طرف سے کھیلنے والے کھلاڑیوں میں سے ٹیم سب سے زیادہ ان کی کمی محسوس کرے گی۔‘

بی بی سی کے کرکٹ کے معاملات کے نامہ نگار جانتھن آیگنیو نے کہا ہے کہ ان کا شمار انگلینڈ کے بہترین کرکٹ کھلاڑیوں میں کیا جائےگا۔

انہوں نے کہا کہ سب محسوس کر رہے تھے کہ یہ سوان کی آخری سیریز ہے مگر اس طرح چھوڑنا غیر متوقع تھا۔

انہوں نے کہا انگلینڈ کے چار بولروں والے اٹیک کے مرکزی کردار کو پر کرنا اب ٹیم کا سب سے بڑا چیلنج ہے۔