سری لنکا نے آخری اوور میں میچ جیت لیا

Image caption چندی مل نے 70 گیندوں پر 64 رنز بنائے اور آؤٹ نہیں ہوئے

ابوظہبی میں پانچویں اور آخری ایک روزہ میچ میں سری لنکا نے آخری اوور میں پاکستان کو دو وکٹوں سے شکست دے دی۔

میچ کی خاص بات سری لنکا کے بلے باز چندی مل کی انتہائی ذمے دارانہ بیٹنگ تھی، جنھوں نے 70 گیندوں پر 64 رنز بنائے اور آخر تک آؤٹ نہیں ہوئے۔

ان کے علاوہ دسویں نمبر پر آنے والے بلے باز اجنتھا مینڈس نے جارحانہ کھیل پیش کرتے ہوئے صرف 14 گیندوں پر 19 رنز بنائے جن میں 49 ویں اوور میں عمر گل کو کور پر لگایا جانے والا شاندار چھکا بھی شامل ہے۔

ان کے علاوہ دونوں اوپنروں دلشن اور پریرا نے بھی عمدہ کھیل پیش کیا اور باالترتیب 45 اور 47 رنز سکور کیے۔

پاکستان کی جانب سے جیند خان نے تین اور سعید اجمل نے دو وکٹیں حاصل کیں۔

اس سے قبل پاکستان کی پوری ٹیم 49.3 گیندوں پر 232 رن بنا کر آؤٹ ہو گئی تھی۔

آخری اوور میں سرگنا لکمل نے دو مسلسل گیندوں پر سیعد اجمل کو ایل بی ڈبلیو اور جنید خان کو بولڈ کر کے پاکستان کی پوری ٹیم کو مقررہ 50 اوور سے پہلے ہی آؤٹ کر دیا۔

آخری اوور کی پہلی گیند پر سعید اجمل نے چوکا لگایا مگر اگلی ہی گیند پر ایل بی ڈبلیو ہو گئے۔ انور علی جنھیں اس سیریز میں پہلی مرتبہ کھلایا گیا دوسری طرف 40 رن بنا کر ناٹ آؤٹ رہے۔

انور علی نے انتہائی جارحانہ بلے بازی کی۔ انھوں نے ملنگا کے آخری اوور میں ایک چھکا اور چوکا لگایا۔ ملنگا اس میچ میں کافی موثر رہے اور انھوں نے پاکستان کے چار کھلاڑیوں کو آؤٹ کیا۔

انور علی نے 38 گیندوں پر 40 رن بنائے۔ پاکستان کی طرف سے کپتان مصباح الحق کامیاب رہے اور انھوں نے نصف سنچری سکور کی۔

گذشتہ میچوں میں تین سنچریاں سکور کرنے والے حفیظ اس مرتبہ زیادہ بہتر کارکردگی نہیں دکھا سکے۔ انھوں نے 55 گیندوں پر 41 رن سکور کیے۔ وہ میتھیو کی گیند پر بولڈ ہو گئے۔

Image caption محمد حفیظ نے گذشتہ تین میچوں میں سنچریاں بنائی تھیں تاہم اس میچ میں وہ صرف 41 رنز سکور کر سکے

پاکستان کرکٹ ٹیم نے سری لنکا کے خلاف پانچ ایک روزہ میچوں کی سیریز میں ناقابل شکست برتری حاصل کرنے کے بعد پانچویں اور آخری ایک روزہ میچ میں ٹاس جیت کر پہلے کھیلنے کا فیصلہ کیا تھا۔

پاکستان نے سری لنکا کی ٹیم کو اب تک کھیلے گئے چار میچوں میں سے تین میں شکست دے کر پہلے ہی سیریز اپنے نام کر لی ہے۔

اس سیریز میں محمد حفیظ کی کارکردگی سب سے نمایاں رہی اور چار میچوں میں سے تین میں وہ سنچری سکور کر چکے ہیں جبکہ دو مرتبہ وہ آؤٹ بھی نہیں ہوئے۔

پاکستان نے ٹیم میں دو تبدیلیاں کی گئی ہیں۔ شاہد آفریدی کی جگہ عبدالرحمان کو شام کیا گیا ہے جبکہ بلاول بھٹی کی جگہ انور علی کو موقع دیا گیا ہے۔

شاہد آفریدی اپنی بیٹی کی علالت کے باعث پاکستان واپس آ گئے ہیں۔

اسی بارے میں