ڈربن ٹیسٹ:’بھارتی ٹیم مشکلات کا شکار‘

Image caption بھارت کی دوسری اننگز کا آغاز دھاون اور وجے نے کیا اور دونوں بلے باز 52 کے سکور پر پویلین واپس لوٹ گئے

ڈربن میں کھیلے جانے والے دوسرے ٹیسٹ میچ کے چوتھے دن کھیل کے اختتام پر بھارت نے اپنی دوسری اننگز میں دو وکٹوں کے نقصان پر 68 رنز بنائے ہیں۔

بھارت کو اب بھی جنوبی افریقہ کی برتری ختم کرنے کے لیے 98 رنز درکار ہیں اور اس کی آٹھ وکٹیں باقی ہیں۔

اس میچ میں بھارت نے اپنی پہلی اننگز میں 334 رنز بنائے تھے جس کے جواب میں جنوبی افریقہ نے بھارت پر پہلی اننگز میں 166 رنز کی برتری حاصل کر لی تھی۔

تفصیلی سکور کارڈ

آخری ٹیسٹ میں ژاک کیلس کی سنچری

دوسری اننگز میں بھارت کے آؤٹ ہونے والے بلے باز دونوں اوپنرز شیکھر دھون اور مرلی وجے تھے۔ بھارت کی پہلی وکٹ آٹھ اور دوسری 52 کے مجموعی سکور پر گری۔

جب کھیل ختم ہوا تو چیتیشور پجارا اور ورات کوہلی کریز پر موجود تھے۔

Image caption ژاک کیلس نے 10 چوکوں کی مدد سے 78 رنز بنائے اور آؤٹ نہیں ہوئے

اس سے قبل میچ کے چوتھے دن جنوبی افریقہ کی ٹیم اپنی پہلی اننگز میں 500 رنز بنا کر آؤٹ ہوگئی۔

جنوبی افریقی اننگز کی خاص بات اپنا آخری ٹیسٹ میچ کھیلنے والے ژاک کیلس کی سنچری تھی جنھوں نے 115 رنز بنائے۔

ان کے علاوہ ابراہم ڈی ویلیئرز اور پیٹرسن نے نصف سنچریاں بنا کر ٹیم کو برتری دلانے میں مدد دی۔

بھارت کی جانب سے رویندر جدیجا 6 وکٹیں حاصل کر کے نمایاں بالر رہے۔

بھارت اور جنوبی افریقہ کے درمیان پہلا ٹیسٹ میچ انتہائی سنسنی خیز مقابلے کے بعد برابری پر ختم ہو گیا تھا۔

اس سے قبل تین ميچوں کی ون ڈے سیریز میں جنوبی افریقہ نے بھارت کو دو صفر سے مات دی تھی جبکہ تیسرا میچ بارش کی نظر ہو گيا تھا۔

اسی بارے میں