سرمائی اولمپکس: پانچ مشتبہ شدت پسند گرفتار

Image caption 29 اور 30 دسمبر کو ملک کے جنوبی شہر وولگوگراد میں ہونے والے بم دھماکے میں 34 افراد ہلاک ہوئے تھے

روس میں حکام نے شمالی کاکیشیا کے علاقے سے ’بین الاقوامی کالعدم شدت پسند تنظیم‘ کے پانچ ارکان کو حراست میں لینے کا دعویٰ کیا ہے۔

یہ گرفتاریاں بحیرۂ اسود کے سیاحی مقام سوچی سے تقریباً 300 کلو میٹر مشرق میں واقع شہر نالچک سے کی گئي ہیں جہاں اگلے ماہ سرمائی اولمپک کھیل منعقد ہوں گے۔

اس سے پہلے روس نے اعلان کیا تھا کہ وہ اسلامی پسند شدت پسندوں کے ممکنہ حملہ کے خدشہ پیش نظر حفاظتی اقدامات کے طور پر اس علاقے میں 30 ہزار پولیس اور نیم فوجی دستوں کو تعینات کر رہا ہے۔

واضح رہے کہ 29 اور 30 دسمبر کو ملک کے جنوبی شہر وولگوگراد میں ہونے والے بم دھماکے میں 34 افراد کی ہلاکت کے بعد اس علاقے میں سکیورٹی کے انتظامات انتہائی سخت کر دیے گئے ہیں۔

مبصرین کے مطابق یہ حملے شمالی کاکیشیا میں سرگرم مسلم شدت پسندوں کے سابقہ حملوں سے مشابہت رکھتے ہیں۔

کسی تنظیم نے ابھی تک ان حملوں کی ذمہ داری قبول نہیں کی تاہم روس میں سب سے زیادہ مطلوبہ شخص اور چیچنیا کے باغی لیڈر دوكو اماروف نے اس سے قبل اپنے جنگجوؤں سے کھیلوں کو نشانہ بنانے کے لیے کہہ رکھا ہے۔

روس کی قومی انسداد دہشت گردی کمیٹی کا کہنا ہے کہ مشتبہ افراد سے گرینیڈ، دھماکہ خیز مواد اور بندوقیں برآمد ہوئی ہیں۔

Image caption روسی پولیس نے وولگوگراد میں ہونے والے دوہرے دھماکے کے بعد 700 سے زیادہ لوگوں کو گرفتار کیا ہے

حکام نے یہ معلومات فراہم نہیں کیں کہ مشتبہ افراد مبینہ طور پر کس شدت پسند تنظیم سے تعلق رکھتے ہیں۔

روسی پولیس نے وولگوگراد میں ہونے والے دوہرے دھماکے کے بعد 700 سے زیادہ لوگوں کو گرفتار کیا ہے۔

تفتیش کاروں کا خیال ہے کہ اس واقعہ کو انجام دینے کے لیے دو لوگ شمالی كاکیشیا سے وہاں گئے تھے۔

ان حملوں نے صدر ولادیمیر پوتن کو اولمپک کی تاریخ میں سب سے بڑی سکیورٹی مہم شروع کرنے پر مجبور کر دیا ہے۔

پوتن بذات خود ان مقامات کا معائنہ کر رہے ہیں جہاں سرمائی کھیل ہونے ہیں۔

سات فروری سے شروع ہو نے والے ان کھیلوں کے کامیاب انعقاد کے لیے روسی حکام نے دو سطح پر سکیورٹی زون بنائے ہیں۔

جہاں اولمپکس کھیل انعقاد ہو رہے ہیں ان مقامات کے قریب بنائے جانے والے ’كنٹرولڈ زون‘ میں صرف وہی لوگ جا سکیں گے جن کے پاس ٹکٹ اور شناختی کارڈ ہوں جبکہ سوچی کے ارد گرد کے کئی بڑے علاقوں کو ’ممنوعہ علاقہ‘ بنایا جا رہا ہے۔

دوسری جانب جمعہ کو امریکہ نے سرمائی اولمپک دیکھنے جانے والے اپنے شہریوں کے لیے سفری ہدایات جاری کی ہیں۔

امریکہ نے اپنے شہریوں کو روس میں شدت پسند حملوں کے پیشِ نظر باخبر رہنے کے لیے کہا ہے۔

چیچنیا میں روسی فوج اور باغیوں کے درمیان جاری جدوجہد کی وجہ سے رواں برسوں میں شدت پسند حملے ہوئے ہیں۔

اسی بارے میں