آسٹریلین اوپن: ثانیہ کے ہاتھوں شکست، اعصام کا سفر تمام

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption اعصام الحق نے تو اس میچ میں عمدہ کھیل کا مظاہرہ کیا تاہم ان کی ساتھی جولیا مخالف جوڑی کو پریشان نہ کر سکیں

مسکڈ ڈبلز مقابلوں کے کوارٹر فائنل میں شکست کے بعد آسٹریلین اوپن میں پاکستانی ٹینس کھلاڑی اعصام الحق کا سفر تمام ہوگیا ہے۔

جمعرات کو میلبرن میں کھیلے گئے میچ میں اعصام الحق اور ان کی جرمن ساتھی جولیا جارجس کو رومانیہ کے ہوریا ٹکاؤ اور ان کی بھارتی ساتھی ثانیہ مرزا نے سٹریٹ سیٹس میں شکست دی۔

ثانیہ سیمی فائنل میں، اعصام ٹورنامنٹ سے باہر

ثانیہ اور ان کے ساتھی نے پہلا سیٹ چھ تین کے سکور سے جیتا اور دوسرے سیٹ کے ابتدا ہی میں اعصام اور جولیا کی سروس بریک کر دی۔

اعصام الحق نے تو اس میچ میں عمدہ کھیل کا مظاہرہ کیا تاہم ان کی ساتھی مخالف جوڑی کو پریشان نہ کر سکیں۔

ہوریا اور ثانیہ نے دوسرا سیٹ چھ چار کے سکور سے جیت کر سیمی فائنل میں جگہ بنا لی جہاں ان کا مقابلہ آسٹریلوی جوڑی سے ہوگا۔

اعصام الحق سال کے اس پہلے گرینڈ سلیم مقابلے میں مردوں کے ڈبلز مقابلے میں بھی بھارت کے روہن بوپنّا کے ہمراہ شریک ہوئے تھے۔

اس زمرے میں انھیں تیسرے راؤنڈ میں فلپائن کے ٹریٹ ہوئے اور برطانیہ کے ڈومینک اگلوٹ کے ہاتھوں شکست ہوئی تھی۔

اعصام اور روہن نے حال ہی میں دوبارہ ایک ساتھ کھیلنا شروع کیا ہے اور وہ آسٹریلین اوپن سے قبل سڈنی میں ایپیا انٹرنیشنل اے ٹی پی ٹینس چیمپیئن شپ کے فائنل تک پہنچے تھے۔

ان دونوں نے سنہ 2007 سے بطور پارٹنرز ٹینس کھیلنا شروع کیا تھا تاہم 2011 میں روہن بوپنا کے ایک اور بھارتی ٹینس کھلاڑی مہیش بھوپتی کے ساتھ جوڑی بنانے کے بعد یہ جوڑی ٹوٹ گئی تھی۔

روہن کے بعد اعصام الحق کے ساتھی ہالینڈ کے ژان جولین راجر بنے تھے اور یہ جوڑی گذشتہ برس بھی آسٹریلین اوپن کے تیسرے راؤنڈ تک ہی پہنچ پائی تھی۔

اسی بارے میں