کیون پیٹرسن کے مستقبل پر اہم اجلاس کل

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption کیون پیٹرسن نے انگلینڈ کی جانب سے ٹیسٹ کرکٹ میں سب سے زیادہ رنز بنائے ہیں

انگلینڈ اور ویلز کرکٹ بورڈ کی سینئیر مینیجمنٹ منگل کو ایک اجلاس میں بلے باز کیون پیٹرسن کے ٹیم میں مستقبل کے بارے میں فیصلہ کرے گی۔

اجلاس میں کیون پیٹرسن کو ویسٹ انڈیز کے دورے کے دوران ایک روزہ ٹیم کا حصہ بنانے یا نہ بنانے کے بارے میں غور کیا جائے گا۔

یہ اجلاس اس بات کا بھی فیصلہ کرے گا کہ آیا پیٹرسن کو دورۂ ویسٹ انڈیز کے بعد بنگلہ دیش میں آئندہ ماہ ہونے والے ٹی ٹوئنٹی عالمی کپ اور اس کے بعد ٹیم میں شامل کیا جائے یا نہیں۔

خیال رہے کہ انگلینڈ اور ویلز کرکٹ بورڈ کے اس اہم ترین اجلاس میں کیون پیٹرسن کے بطور انگلش ٹیم کا حصہ ہونے یا ہونے کے بارے میں ہمیشہ کے لیے فیصلہ کیا جائے گا۔

لارڈز میں ہونے والے اس اہم اجلاس کی صدارت انگلینڈ کے نئے مینیجنگ ڈائریکٹر پال ڈاؤنٹن کریں گے جب کہ قومی سلیکٹر جیمز ویٹیکر اور انگلینڈ کی ایک روزہ ٹیم کے ہیڈ کوچ ایشلی جائلز بھی شرکت کریں گے۔

خیال رہے کہ کیون پیٹرسن نے انگلینڈ کی جانب سے ٹیسٹ کرکٹ میں سب سے زیادہ رنز بنائے ہیں۔ انھوں نے انگلینڈ کی جانب سے 88 ٹیسٹ میچوں میں 49.48 کی اوسط سے 21 سنچریوں اور 27 نصف سنچریوں کی بدولت 7076 رنز بنائے ہیں۔

پیٹرسن نے 127 ایک روزہ میچوں میں 41. 84 کی اوسط سے نو سنچریوں اور 23 نصف سنچریوں کی مدد سے 4184 جبکہ 36 ٹی ٹوئنٹی میچوں میں 37.93 کی اوسط سے سات نصف سنچریوں کی مدد سے 1176 رنز بنائے ہیں۔

پیٹرسن کو سنہ 2012 میں اس وقت ٹیم سے نکال دیا تھا جب انھوں نے جنوبی افریقہ کے خلاف میچ کے دوران جنوبی افریقی کھلاڑیوں کو اپنی ٹیم اور بالخصوص کپتان اینڈریو سٹراؤس کے بارے میں ’اشتعال آمیز‘ ٹیکسٹ میسج بھیجے تھے۔

اسی بارے میں