انڈر19 ورلڈ کپ میں پاک بھارت میچ

تصویر کے کاپی رائٹ ICC
Image caption متحدہ عرب امارات پہلی مرتبہ انڈر 19 کرکٹ ورلڈ کپ کی میزبانی کررہا ہے

انڈر 19 کرکٹ ورلڈ کپ میں پاکستان اور بھارت کے درمیان میچ پندرہ فروری کو دبئی میں کھیلا جائے گا۔

یہ دونوں ٹیمیں عالمی مقابلے کے گروپ اے کا حصہ ہیں۔

متحدہ عرب امارات پہلی مرتبہ انڈر 19 کرکٹ ورلڈ کپ کی میزبانی کر رہا ہے اور چودہ فروری سے یکم مارچ تک ہونے والے اس ایونٹ کے میچز دبئی شارجہ اور ابوظہبی میں کھیلے جائیں گے۔

بھارت انڈر19 ورلڈ کپ کا دفاعی چیمپئن ہے۔ بھارت اور آسٹریلیا دو ایسے ممالک ہیں جنہوں نے یہ ایونٹ تین تین مرتبہ جیتا ہے۔

پاکستان کو مسلسل دو مرتبہ یہ ٹورنامنٹ جیتنے کا منفرد اعزاز حاصل ہے۔ 2004 میں پاکستان نے خالد لطیف کی قیادت میں کامیابی حاصل کی اور پھر دوسال بعد وکٹ کیپر سرفراز احمد کی قیادت میں اعزاز کا دفاع کیا۔

متحدہ عرب امارات میں ہونے والے جونیئر عالمی مقابلے میں پاکستانی ٹیم کی قیادت سمیع اسلم کر رہے ہیں۔

سمیع اسلم کا کہنا ہے کہ پاکستانی انڈر ٹیم متوازن ہے۔ بیٹنگ اور سپن بولنگ کا شعبہ مضبوط ہے۔

سمیع اسلم کا کہنا ہے کہ ایشیا کپ انڈر 19 کے فائنل سے پہلے پاکستانی ٹیم نے شاندار کارکردگی کا مظاہرہ کرتے ہوئے بیس میچ جیتے تھے اور وہ صرف بھارت ہی نہیں بلکہ پورے ٹورنامنٹ کے بارے میں پرامید ہیں۔

بھارتی انڈر19 کپتان وجے زول کا کہنا ہے کہ ان کی ٹیم کو پاکستان پر نفسیاتی برتری حاصل ہوگی کیونکہ ایشیا کپ انڈر19 کے فائنل میں انہوں نےپاکستان کو ہرایا تھا۔

وہ کہتے ہیں کہ بھارتی ٹیم کی تیاری اچھی ہے اور بنیادی باتوں پر خاص طور پر توجہ دی گئی ہے جن میں وکٹوں کے درمیان دوڑنا اور فیلڈنگ قابل ذکر ہیں۔

انڈر ورلڈ کپ میں پاکستان اور بھارت کے ساتھ گروپ اے میں اسکاٹ لینڈ اور پاپوانیوگنی کی ٹیمیں شامل ہیں۔ اس گروپ سے پاکستان اور بھارت کے سپر لیگ کوارٹرفائنل میں پہنچنے کے امکانات روشن ہیں۔

اسی بارے میں