آئي پی ایل، بنگلور کے خلاف کولکتہ کی فتح

Image caption کولکتہ کی ٹیم نے پہلے بیٹنگ کرتے ہوئے بنگلور کو جیتنے کے لیے 151 رنز کا آسان ہدف دیا تھا

انڈين پریمیئر لیگ کے ساتویں سیزن کے گیارہویں میچ میں کولکتہ نائٹ رائڈرز نے ایک سنسنی خیز مقابلے میں رائل چيلینجرز بنگلور کو دو رن سے شکست دے دی۔

جیت کے لیے آخری گیند پر رائل چیلینجرز بنگلور کو چار رن درکار تھے لیکن وہ اس کے کھلاڑی یہ رن بنانے میں ناکام رہے۔

کولکتہ کی ٹیم نے پہلے بیٹنگ کرتے ہوئے بنگلور کو جیتنے کے لیے 151 رنز کا آسان ہدف دیا تھا لیکن رائل چیلنجرز بنگلور پانچ وکٹ کے نقصان پر 148 رن ہی بنا سکی۔

بنگلور کی جانب سے پارتھیو پٹیل اور یوگیش ٹکاولے نے اپنی ٹیم کو اچھا آغاز فراہم کیا اور ٹکاولے نے آٹھ چوکوں کی مدد سے 28 گیندوں پر چالیس رن بنائے۔

بنگلور کے کپتان وراٹ کوہلی اور یواراج سنگھ میں بھی 62 رن کی اچھی شراکت ہوئی اور ایک وقت پر ایسا لگا جیسے میچ پر کولکتہ کی ٹیم کی گرفت نہیں رہی۔

لیکن آخری اوور میں بنگلور کی ٹیم ایسا لڑکھڑائی کی دو رن سے اسے شکست سے دو چار ہونا پڑا۔

ونے کمار نے اچھی باؤلنگ کا مظاہرہ کرتے ہوئے 26 رن دیکر دو وکٹیں حاصل کیں۔ انہوں نے ہی آخری اوور پھینکا اور میچ کا پانسا پلٹ دیا۔

جمعرات کو شارجہ میں کھیلے گئے اس میچ میں بنگلور کی ٹیم نے ٹاس جیت کر فیلڈنگ کا فیصلہ کیا اور کولکتہ نائٹ رائڈرز کو پہلے بیٹنگ کی دعوت دی تھی۔

کولکتہ کی ٹیم نے مقررہ بیس اوور میں سات وکٹ کے نقصان پر 150 رن سکور کیے۔ کولکتہ نائٹ رائڈرز کے ژاک کالس نے 43 اور کرس لین نے 45 رنوں کی اچھی اننگز کھیلیں۔

لین نے اچھی فیلڈنگ کا بھی مظاہرہ کیا اور نازک موقع پر اے بی ڈیویلیئر کا کیچ پکڑا۔ انہیں میچ آف دی مین کے خطاب سے نوازا گيا۔

اس ٹورنامنٹ میں ان دونوں ہی ٹیم کا یہ تیسرا میچ تھا۔ کولکتہ نائٹ رائڈرز کی یہ دوسری کامیابی ہے جبکہ بنگلور کی ٹیم کی یہ پہلی شکست ہے۔

اسی بارے میں