پی سی بی کی نئی سلیکشن کمیٹی کا اعلان

تصویر کے کاپی رائٹ BBC World Service
Image caption ماضی میں اتنی بڑی تعداد میں سلیکٹرز بنائے جانے کی مثال نہیں ملتی

پاکستان کرکٹ بورڈ نے چھ رکنی نئی قومی سلیکشن کمیٹی کا اعلان کردیا ہے۔

معین خان کو راشد لطیف کے انکار کے بعد پہلے ہی چیف سلیکٹر مقرر کیا جا چکا ہے۔

کمیٹی کے دیگر ارکان میں سابق ٹیسٹ کرکٹرز اعجاز احمد، شعیب محمد، سلیم یوسف، وجاہت اللہ واسطی اور محمد اکرم شامل ہیں۔

ماضی میں اتنی بڑی تعداد میں سلیکٹرز بنائے جانے کی مثال نہیں ملتی جو عام طور پر تین یا چار افراد پر مشتمل ہوا کرتی ہے۔

اعجاز احمد، وجاہت اللہ واسطی اور محمد اکرم پہلی مرتبہ سلیکشن کمیٹی میں شامل کیے گئے ہیں۔

غور طلب بات یہ ہے کہ محمد اکرم کو بولنگ کوچ کے عہدے سے ہٹاکر سلیکشن کمیٹی میں لایا گیا ہے اس کے علاوہ وہ لاہور میں پاکستان کرکٹ بورڈ کی قومی کرکٹ اکیڈمی کے ہیڈ کوچ بھی بنادیے گئے ہیں۔

تصویر کے کاپی رائٹ AFP Getty
Image caption معین خان کو راشد لطیف کے انکار کے بعد پہلے ہی چیف سلیکٹر مقرر کیا جا چکا ہے

محمد اکرم کے بارے میں سب سے اہم بات یہ ہے کہ سابق چیرمین ذکا اشرف نے انہیں بولنگ کوچ کا عہدہ دوسال کے لیے تھما دیا تھا۔

نجم سیٹھی نے پاکستان کرکٹ بورڈ کا چیرمین بننے کے بعد معین خان کو دو ٹورنامنٹس ایشیا کپ اور ورلڈ ٹی ٹوئنٹی کے لیے کوچ مقرر کیا تھا لیکن کرکٹ بورڈ محمد اکرم کو اس لیے تبدیل نہیں کرسکا تھا کیونکہ اس صورت میں اسے معاہدے کی رو سے ایک بڑی رقم انہیں ادا کرنی پڑتی لہذا اب محمد اکرم کو ایڈ جسٹ کرتے ہوئے سلیکشن کمیٹی میں شامل کرنے کے ساتھ ساتھ قومی اکیڈمی کا ہیڈ کوچ بنایا گیا ہے۔

محمد اکرم کو ایڈ جسٹ کرنے کی ایک وجہ یہ بھی ہے کہ وقار یونس پاکستانی ٹیم کے کوچ کے لیے مضبوط امیدوار کے طور پر سامنے آئے ہیں لہٰذا ان کی موجودگی میں کسی دوسرے فاسٹ بولر کی بولنگ کوچ کے طور پر ضرورت نہ رہے۔ البتہ پاکستان کرکٹ بورڈ نے ہیڈ کوچ بیٹنگ اور فیلڈنگ کوچ کے ساتھ ساتھ اسپن بولنگ کنسلٹنٹ کے لیے بھی درخواستیں طلب کی ہیں۔

اسپن بولنگ کنسلٹنٹ کے طور پر مشتاق احمد کا نام لیا جارہا ہے جبکہ بیٹنگ کوچ کے طور پر انضمام الحق کا نام سامنے آیا ہے۔

پاکستان کرکٹ بورڈ نے اسپن بولنگ کنسلٹنٹ کے لیے اشتہار دے رکھا ہے۔

اسی بارے میں