ہاکی کمنٹیٹر ایس ایم نقی انتقال کرگئے

تصویر کے کاپی رائٹ BBC World Service
Image caption حکومت پاکستان نے ایس ایم نقی کو ہاکی کمنٹری میں گرانقدر خدمات پر سنہ 2004 میں پرائیڈ آف پرفارمنس بھی دیا تھا

پاکستان کے معروف ہاکی کمنٹیٹر ایس ایم نقی طویل علالت کے بعد 80 برس کی عمر میں ہفتے کی شب کراچی میں انتقال کرگئے۔

ایس ایم نقی کی شخصیت کے کئی پہلو تھے۔ انھوں نے باکسنگ، ریسلنگ اور چند دوسرے کھیلوں کی کمنٹری بھی کی لیکن ہاکی کمنٹری میں انھیں ہمیشہ اہم مقام حاصل رہا۔

اپنے منفرد انداز وبیان کی وجہ سے وہ ہاکی کے حلقوں میں بہت مقبول تھے۔

حکومت پاکستان نے ایس ایم نقی کو ہاکی کمنٹری میں گرانقدر خدمات پر سنہ 2004 میں پرائیڈ آف پرفارمنس بھی دیا تھا۔

ایس ایم نقی کو یہ اعزاز حاصل ہے کہ انھوں نے سنہ 1964 سے 2000 کے درمیانی عرصے میں نو اولمپکس میں کمنٹری کی۔

پاکستان میں کوئی بھی کمنٹیٹر ان سے زیادہ اولمپکس میں کمنٹری نہیں کرسکا۔

ایس ایم نقی ایک شفیق انسان تھے جو کمنٹری باکس میں اپنی خوش مزاجی اور زندہ دلی کے سبب مقبول شخص کے طور پر مشہور تھے۔

ان کے انتقال کے ساتھ ہی پاکستان میں ہاکی کمنٹری کا ایک سنہری دور بھی ختم ہوگیا۔

ان کے ہم عصر کمنٹیٹرز فاروق مظہر، مظاہر باری، کمانڈر اقبال ہاشمی اور ذاکر حسین سید بھی اب اس دنیا میں نہیں ہیں۔

ایس ایم نقی صحافت میں بھی قدر کی نگاہ سے دیکھے جاتے تھے۔ وہ ایک طویل عرصے تک روزنامہ مشرق سے وابستہ رہے۔

اسی بارے میں