’ کھلاڑیوں کی ماؤں کا شکریہ‘

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images
Image caption ایتھلیٹکو میڈرڈ 1974 کے بعد پہلی بار چیمپیئنز لیگ کے فائنل میں پہنچی ہے

سپین کے فٹبال کلب ایتھلیٹکو میڈرڈ کے مینیجر ڈیئگو سیمیون نے اپنے کلب کی چیمپیئنز لیگ کے سیمی فائنل میں فتح کے بعد اپنی ٹیم کے کھلاڑیوں کی ماؤں کا شکریہ ادا کیا ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ وہ کھلاڑیوں کو ذہنی طور پر مضبوط کرنے کےلیے ان ماؤں کے شکر گزار ہیں جنہوں نے ان کھلاڑیوں کی پرورش کی۔

ارجنٹینا سے تعلق رکھنے والے ڈیئگو سیمیون نے سیمی فائنل میں اپنی ٹیم کی کارکردگی کو سرہاتے ہوئے کہا کہ ان کے کھلاڑیوں نے میچ پر اپنی گرفت مضبوط کرتے ہوئے ایسی ٹیم کو شکست دی جو کہ چیمپیئنز لیگ کھیلنے کا بہت تجربہ رکھتی ہے۔ سیمیون نے کہا کہ ایتھلیٹکو میڈرڈ کے کھلاڑیوں کی سیمی فائنل میں کارکردگی کو لوگ ہمیشہ یاد رکھیں گے۔

بدھ کو ہونے والے چیمپیئنز لیگ کے سیمی فائنل میں سپین سے تعلق رکھنے والے ایتھلیٹکو میڈرڈ نے برطانوی کلب چیلسی کو 3-1 سے شکست دی۔ سیمی فائنل میچ کے اختتام پر ایتھلیٹکو میڈرڈ کی ٹیم کے کھلاڑیوں نے میدان میں دیوانہ وار رقص کیا۔

ایتھلیٹکو میڈرڈ سپین کی لا لیگا میں بھی سب سے زیادہ پوائنٹس کے ساتھ سرفہرست ہے اور اگر اس نے اپنے بقیہ پانچ میچوں میں فتح حاصل تو اٹھارہ سال بعد پہلی بار لالیگا جیت لےگا۔

فٹبال ماہرین نے حالیہ عرصے میں ایتھلیٹکو میڈرڈ کے دفاع کو بہت سراہا ہے۔ ماہرین کا کہنا ہے کہ ہسپانوی کلب کی دفاعی حکمتِ عملی ہر میچ کے ساتھ بہتر ہوتی جا رہی ہے۔

ایتھلیٹکو میڈرڈ 1974 کے بعد پہلی بار چیمپیئنز لیگ کے فائنل میں پہنچی ہے جہاں ان کا مقابلہ اپنے سپین کے شہر میڈرڈ سے ہی تعلق رکھنے والے کلب ریال میڈرڈ سے ہے۔

ریال میڈرڈ کے کوچ کارلو انشلوٹی نے کہا ہے کہ میڈرڈ شہر کی عوام کو دونوں ٹیموں کے فائنل میں پہنچنے کی بہت خوشی ہے اور فائنل میں زبردست مقابلہ ہوگا۔

واضع رہے کہ ریال میڈرڈ نے 12 سال کے طویل عرصے کے بعد چیمپیئنز لیگ کے فائنل کےلیے کوالیفائی کیا ہے۔ چیمپیئنز لیگ ٹورنامنٹ میں یہ پہلا موقع ہے کہ ایک ہی شہر سے تعلق رکھنے والی دو ٹیموں نے فائنل کے لیے کوالیفائی کر لیا ہے۔

اسی بارے میں