بلاٹر پانچویں بار فیفا کا انتخاب لڑنے کے لیے تیار

تصویر کے کاپی رائٹ Reuters
Image caption فٹبال کی عالمی تنظیم’فیفا‘پر ورلڈ کپ سنہ 2022 میں فٹ بال کے عالمی کپ کی میزبانی قطر کو دینے کے متنازع فیصلے میں بدعنوانی کے نئے الزامات سامنے آئے تھے

فٹبال کی عالمی تنظیم فیفا کے صدر سیپ بلاٹر نے کہا کہ ان کا مشن ختم نہیں ہوا اور انھیں تنظیم کی جانب سے پانچویں بار انتخاب لڑنے کے لیے کلیئر کر دیا گیا ہے۔

خیال رہے کہ 78 سالہ سیپ بلاٹر پر رشوت ستانی کے مبینہ الزامات سے فٹبال کی عالمی تنظیم کی شبیہ کو نقصان پہنچانے سے تنقید ہوتی رہتی ہے۔

تاہم برازیل میں فٹبال کے عالمی مقابلوں کا آغاز ہونے سے پہلے فیفا نے یہ فیصلہ کیا ہے کہ وہ تنظیم کی صدر کی حیثیت سے انتخاب لڑنے کے لیے عمر اور ایک امیدوار کتنی بار صدر کا انتخاب لڑ سکتا ہے پر پابندی عائد نہیں کرے گی۔

سوئٹزر لینڈ میں فیفا کی کانگرس سے خطاب کرتے ہوئے بلاٹر کا کہنا تھا کہ انھیں معلوم ہے ان کا مینڈیٹ آئندہ برس 29 مئی کو ختم ہو جائے گا تاہم میرا مشن ابھی ختم نہیں ہوا ہے۔

انھوں نے مزید کہا ’ہم سب مل کر فیفا کو نئی شکل دیں گے۔ ہمارے پاس بنیاد اور ہمارے پاس آئندہ چار برس کا بجٹ موجود ہے۔‘

بلاٹر نے کہا کہ میں آپ کو بتا سکتا کہ میں مستقبل میں بھی فیفا کی کانگرس کے ساتھ کام کرنے کو تیار ہوں۔

واضح رہے کہ فٹبال کی عالمی تنظیم’فیفا‘پر ورلڈ کپ سنہ 2022 میں فٹ بال کے عالمی کپ کی میزبانی قطر کو دینے کے متنازع فیصلے میں بدعنوانی کے نئے الزامات سامنے آئے تھے۔

برطانوی اخبار سنڈے ٹائمز نے الزام لگایا تھا کہ قطر کو سنہ 2022 میں فٹ بال کے عالمی کپ کی میزبانی کا حق دیے جانے کے لیے فیفا کی ایگزیکٹیو کمیٹی کے قطری رکن محمد بن حمام نے مختلف حکام کو لاکھوں پاؤنڈز ادا کیے تھے۔

قطر میں سنہ 2022 میں فٹ بال کے عالمی کپ کی میزبانی کے لیے بولی لگانے والی کمیٹی نے ایک بیان جاری کرتے ہوئے ’کسی قسم کی بدعنوانی‘ کی تردید کی تھی۔

اسی بارے میں