ورلڈ کپ 2014: پانچ حیران کن اور مایوس کن چیزیں

تصویر کے کاپی رائٹ Getty

فٹبال ورلڈ کپ میں ابتدائی گروپ مرحلے کے میچ جاری ہیں اور متعدد ٹیموں اپنے دو دو میچ کھیل لیے ہیں۔ بی بی سی سپورٹس کے سٹیفن فوٹرل نے اب تک اس ٹورنامنٹ کی حیران کن اور مایوس کن باتوں پر نظر ڈالی ہے۔

پانچ حیران کن چیزیں

کوسٹاریکا

تصویر کے کاپی رائٹ AP
Image caption کوسٹاریکا نے یوراگوائے کو ہرا کر ورلڈ کپ میں اپ سیٹ کیا ہے

وسطی امریکی ملک کوسٹاریکا کی ٹیم فیفا کی درجہ بندی کے حساب سے مشکل ترین گروپ میں ہے جہاں اس کا مقابلہ انگلینڈ، یوروگوائے اور اٹلی سے ہے۔ لیکن سب اندازوں کے برعکس کوسٹاریکا نے ورلڈ کپ میں شاندار آغاز کیا۔

یوروگوائے کے خلاف ایک گول کے خسارے میں جانے کے باوجود تین ایک کے سکور سے میچ جیتنا کم بات نہیں اور کس نے سوچا تھا کہ کوسٹاریکا ٹورنامنٹ میں پہلے میچوں کے بعد گروپ میں سرفہرست ہوگا۔

کوسٹاریکا کی فتح میں اہم کردار آرسنل کے فارورڈ جوئل کیمبل کا رہا جنھیں کلب نے 2011 میں سائن کیا تھا لیکن آج تک نہیں کھلایا۔

گولوں کی برسات

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption اب تک ٹورنامنٹ میں فی میچ اوسط تین گول سے زیادہ ہے

برازیل 2014 کا پہلا گول ٹورنامنٹ کے آغاز کے 11 منٹ بعد ہوا اور اس کے بعد جیسے گولوں کی بارش شروع ہوگئی۔

ٹورنامنٹ کے ابتدائی چار میچوں میں ہی 15 مرتبہ گیند گول میں گئی ہے۔

اب تک ٹورنامنٹ میں فی میچ اوسط تین گول سے زیادہ ہے۔ دلچسپ بات یہ ہے کہ گذشتہ ورلڈ کپ میں ٹونامنٹ کی تاریخ کے سب سے کم گول ہوئے تھے۔

میکسیکو کے گول کیپر کے کمالات

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption اوچوا کے ’گورڈن بینکس‘ لمحے کا عکس

برازیل نے اپنے گروپ کا دوسرا میچ میکسیکو کے خلاف بغیر کسی گول کے برابر کھیلا اور برازیل کی راہ میں حائل سب سے بڑی دیوار میکسیکن گول کیپر گولیرمو اوچوا تھے۔

اوچوا نے جو اس وقت کسی بھی کلب سے وابستہ نہیں، اس میچ میں برازیلی کھلاڑیوں کی ہر کوشش کو ناکام بنایا۔

ان کوششوں میں سے ایک نیمار کے شاندار ہیڈر کو روکنے کی تھی جسے ٹوئٹر پر 1970 میں انگلش کیپر گورڈن بینکس کی اس کوشش جیسا قرار دیا گیا جب انھوں نے برازیلی سٹرائیکر پیلے کے ہیڈر کو روکا تھا۔

غائب ہونے والا سپرے

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption تماشائیوں اور شائقین نے اس کے استعمال کا خیرمقدم کیا ہے

اس ٹورنامنٹ میں فری کک کے وقت بال کی صحیح جگہ کے تعین اور دفاعی کھلاڑیوں کی دیوار کی حد مقرر کرنے کے لیے ریفری کے پاس ایک سپرے ہے۔

یہ سپرے جنوبی امریکہ میں خاصے عرصے سے استعمال کیا جا رہا ہے لیکن ورلڈ کپ میں پہلی بار ایسا ہو رہا ہے۔

تماشائیوں اور شائقین نے اس کے استعمال کا خیرمقدم کیا ہے اور اب تک واحد شخص جسے اس سپرے سے مسئلہ ہوا ہے وہ ہالینڈ کے دفاعی کھلاڑی برونو مارٹنز انڈی ہیں جنھیں شکوہ ہے کہ سپرے ان کے جوتے خراب کر رہا ہے۔

رحیم سٹرلنگ

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption رحیم سٹرلنگ کو بہترین نوجوان کھلاڑیوں میں شمار کیا جاتا ہے

انگلش پریمیئر لیگ کے شائقین لیورپول کے اس 19 سالہ ونگر سے واقف تو ہیں لیکن انگلش ٹیم کے اس نئے ستارے کی ورلڈ کپ سکواڈ میں شمولیت سے کافی لوگ حیران ہوئے۔

جمیکا میں پیدا ہونے والے نوجوان سٹرلنگ نے مناس میں اٹلی کے خلاف میچ میں اپنی کارکردگی سے سب کو متاثر کیا ہے۔

اس میچ کے دوران انگلینڈ میں گوگل پرسب سے زیادہ تلاش کیے جانے والے الفاظ میں رحیم سٹرلنگ کا نام بھی شامل تھا۔

پانچ مایوس کن چیزیں

سپین کی کارکردگی

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption ورلڈ کپ میں کیسیئس کی کارکردگی انتہائی خراب رہی ہے

دفاعی چیمپیئن سپین کی ٹیم اس ورلڈ کپ میں آنے سے قبل گذشتہ چھ برس سے دنیائے فٹبال پر راج کر رہی تھی اور اس دوران اس نے لگاتار تین بڑے عالمی ٹورنامنٹ 2008 اور 2012 کے یورو مقابلے اور 2010 کا ورلڈ کپ جیتا۔

اس کارکردگی کے تناظر میں سوچا جا رہا تھا کہ سپین شاندار انداز میں اپنے اعزاز کے دفاع کی کوشش کرے گی لیکن سلواڈور میں جو ہوا اس نے نہ صرف وہاں موجود تماشائیوں بلکہ دنیا بھر میں فٹبال کے شائقین کو حیران کر دیا۔

ہالینڈ نے اس میچ میں سپین کو تباہ کر کے رکھ دیا اور پانچ ایک کی شکست کا دھچکا اتنا بڑا تھا کہ سپین کی ٹیم اس سے سنبھل نہ پائی اور اگلے گروپ میچ میں چلی کے ہاتھوں ہار کر ٹورنامنٹ سے ہی باہر ہوگئی۔

ریفری

Image caption ٹورنامنٹ میں پنلٹی کے کئی فیصلے متنازع رہے ہیں

برازیل میں جاری مقابلوں میں کچھ میچ آفیشلز کی کارکردگی پر سوال اٹھے ہیں۔

پہلے ہی میچ میں کروئیشیا کو برازیل کے خلاف ملنے والی پنلٹی متنازع ثابت ہوئی۔

جاپانی ریفری کے اس فیصلے پر خاصی تنقید ہوئی کیونکہ ری پلے میں واضح تھا کہ کروئیشین کھلاڑی دیجان لوورن برازیلی فارورڈ سے نہیں ٹکرائے تھے۔

نیمار نے اس پنلٹی پر گول کیا اور میچ کے بعد کروئیشیا کے کوچ نے کہا کہ اگر یہی حالات ہیں تو ٹرافی برازیل کو دے کر ہمیں گھر چلے جانا چاہیے۔

ایک اور متنازع فیصلے میں ریفری نے سپین کے ڈیاگو کوسٹا کو ہالینڈ کے خلاف پنلٹی دی جبکہ ری پلے میں واضح تھا کہ کوسٹا خود ڈچ کھلاری کے پاؤں پر چڑھے تھے۔

گول لائن ٹیکنالوجی

تصویر کے کاپی رائٹ GOALCONTROL
Image caption ریفری گول لائن ٹیکنالوجی کا نتیجہ خصوصی گھڑی پر دیکھ سکتے ہیں

یہ ورلڈ کپ گول لائن ٹیکنالوجی کا افتتاحی ٹورنامنٹ ہے لیکن جب پہلی بار اسے استعمال کیا گیا تو اس موقع پر کنفیوژن پیدا ہوگئی۔

ہونڈورس کے خلاف میچ میں فرانس کے کریم بینزیما کی ہٹ پر پہلے گول لائن ٹیکنالوجی نے اسے گول قرار نہیں دیا لیکن پھر اسے گول قرار دے دیا گیا۔

اگرچہ بعد میں صورتحال واضح ہوئی کہ واقعی یہ گول تھا لیکن اس کی وجہ سے دونوں ٹیموں کے کوچ اور تماشائی پریشان ہوئے۔

نائجیریا اور ایران کا میچ

تصویر کے کاپی رائٹ Reuters
Image caption ایران کے دفاعی کھیل کے میچ کو مزید غیردلچسپ بنایا

اس ورلڈ کپ میں جہاں تقریباً ہر میچ میں ہی گول ہو رہے ہیں اور شائقین ان میچوں سے لطف اٹھا رہے ہیں وہیں ایک میچ ایسا ہوا جسے شاید اس ورلڈ کپ میں کوئی یاد نہیں رکھنا چاہے گا۔

اس میچ میں ایران اور نائجیریا کی ٹیمیں مدمقابل تھیں اور اسے اب تک کے مقابلوں کا سب سے بور میچ قرار دیا جا رہا ہے۔

نائجیریا کی ٹیم نے اس میچ میں گیند پر زیادہ کنٹرول رکھا لیکن گول کرنے کی کوشش نہیں کی۔

ادھر ایران کے دفاعی کھیل کے میچ کو مزید غیردلچسپ بنایا لیکن دلچسپ بات یہ ہے کہ اس بغیر گول کے بےنتیجہ میچ پر بھی ایران میں جشن منایا گیا۔

میسی کا مزاج

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption اطلاعات کے مطابق میسی نے اس بچے کو ڈھونڈ کر اس سے معذرت بھی کی ہے

اس ورلڈ کپ میں ارجنٹائن کے سٹار فٹبالر میسی سے سب کو بہت امیدیں ہیں اور میسی ان پر کھیل کے میدان میں پورا اتر بھی رہے ہیں۔

لیکن میدان سے باہر انھوں نے اپنے ایک ننھے مداح کو اس وقت مایوس کر دیا جب وہ میچ کے آغاز سے قبل نظر انداز کرتے ہوئے آگے بڑھ گئے اور وہ بچہ ہاتھ پھیلائے میسی سے مصافحے کا منتظر ہی رہ گیا۔

میسی کا کہنا ہے کہ ان کا یہ فعل غیر ارادی تھا اور اطلاعات کے مطابق میسی نے اس بچے کو ڈھونڈ کر اس سے معذرت بھی کر لی ہے۔

.

اسی بارے میں