امریکہ ہار کر بھی آگے، پرتگال جیت کر بھی باہر

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption میسی اور نیمار کے ہمراہ گولڈن بوٹ کے امیدواروں کی فہرست میں شامل ہوگئے ہیں

برازیل میں جاری ورلڈ کپ 2014 کےگروپ جی میں جمعے کو پہلے راؤنڈ کے آخری میچوں میں امریکہ کی ٹیم جرمنی سے ہارنے کے باوجود اگلے راؤنڈ میں پہنچنے میں کامیاب رہی ہے جبکہ پرتگال کی ٹیم گھانا کو ہرانے کے باوجود ورلڈ کپ سے باہر ہوگئی ہے۔

جرمنی اور امریکہ کا میچ رسیفے میں شدید بارش میں کھیلا گیا اور جرمنی نے یہ میچ ایک گول سے جیتتے ہوئے ٹورنامنٹ میں ناقابلِ شکست رہنے کا اعزاز برقرار رکھا۔

اگلے راؤنڈ میں رسائی کے لیے دونوں ٹیموں کا یہ میچ برابر کرنا ہی کافی تھا اور پہلے ہاف میں بظاہر یہی لگتا تھا کہ دونوں ٹیمیں اس بات کے لیے ذہنی طور پر تیار ہیں۔

میچ کے پہلے ہاف میں دونوں ٹیمیں گول کرنے میں ناکام رہیں لیکن دوسرے ہاف میں جرمنی کی ٹیم زیادہ مثبت انداز میں میدان میں اتری اور 55 ویں منٹ میں تھامس ملر کے گول کی بدولت برتری حاصل کر لی۔

یہ ملر کا اس ورلڈکپ میں چوتھا اور ان مقابلوں میں مجموعی طور پر نواں گول تھا۔ اب وہ میسی اور نیمار کے ہمراہ گولڈن بوٹ کے امیدواروں کی فہرست میں شامل ہوگئے ہیں۔

ملر کی دی گئی برتری میچ کے اختتام تک قائم رہی اور جرمنی نے میچ جیت کر گروپ میں اپنا پہلا نمبر برقرار رکھا۔

ادھر امریکہ کی ٹیم شکست کے باوجود پوائنٹس ٹیبل پر گولوں کے بہتر فرق کی وجہ سے اگلے مرحلے میں پہنچنے میں کامیاب رہی۔

پرتگال جیت کر بھی باہر

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption رونالڈو اس میچ میں ’ون مین ٹیم‘ کی صورت میں نظر آئے

پرتگال اور گھانا برازیلیا میں مدِمقابل آئے اور یورپی ٹیم نے یہ میچ ایک کے مقابلے میں دو گول سے جیتا۔

میچ کے آغاز سے قبل ہی گھانا کی ٹیم تنازعات کا شکار تھی اور ٹیم انتظامیہ نے دو کھلاڑیوں سلی منٹاری اور پرنس بوٹینگ کو ایگزیکیٹو کمیٹی کے ایک ممبر پر بلا اشتعال حملے کی کوشش پر میچ شروع ہونے سے تین گھنٹے پہلے وطن واپس بھیج دیا۔

اس میچ کے آغاز میں ہی پرتگال کی برتری حاصل کرنے کی ایک کوشش اس وقت ناکام ہوئی جب میچ کے پانچویں منٹ میں کرستیانو رونالڈ کا عمدہ کراس گھانا کے گول پوسٹ سے ٹکرا کر واپس آگیا۔

کچھ ہی دیر بعد رونالڈو ہی ایک کا خطرناک ہیڈر اور یقینی گول گھانا کے کیپر دودا نے روک لیا۔

گھانا کے گول پر لگاتار حملوں کا صلہ پرتگال کی ٹیم کو اس وقت ملا جب 30ویں منٹ میں گھانا کے دفاعی کھلاڑی جان بویے نے اپنے ہی گول میں گیند ڈال کر پرتگال کو برتری دلوا دی۔

پہلے ہاف کے اختتام تک یہ برتری قائم رہی تاہم دوسرے ہاف میں گھانا نے بہتر کھیل کا مظاہرہ کیا اور آغاز سے ہی پرتگال کے گول پر لگاتار حملے کیے۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption اسامؤا ورلڈ کپ مقابلوں میں سب سے زیادہ گول کرنے والے افریقی کھلاڑی بن گئے

ایسی ہی ایک کوشش کے دوران 55ویں منٹ میں کواڈو اساموا کے شاندار پاس پر اسامؤا گیان نے ہیڈر کے ذریعے گول کر کے میچ برابر کر دیا۔

اس گول کی بدولت اسامؤا ورلڈ کپ مقابلوں میں سب سے زیادہ گول کرنے والے افریقی کھلاڑی بن گئے۔ اس سے قبل یہ اعزاز کیمرون کے راجر ملا کے پاس تھا۔

کرستیانو رونالڈو نے 80 ویں منٹ میں گول کر کے پرتگال کو پھر برتری دلوائی جو میچ کے اختتام تک قائم رہی۔

تاہم میچ میں فتح کے بعد امریکہ سے پوائنٹس برابر ہونے کے باوجود گولوں کے منفی فرق کی وجہ سے پرتگال کی ٹیم ورلڈ کپ سے باہر ہوگئی۔

اسی بارے میں