آسان میچ نہیں، زیادہ گولوں کی توقع نہ کریں: نیمار

تصویر کے کاپی رائٹ Reuters
Image caption چلی کے خلاف پری کوارٹر فائنل میں نیمار کے گھٹنے اور ران پر چوٹ لگی تھی تاہم انھوں نے کہا کہ وہ اب مکمل طور پر فٹ ہیں

برازیلی فٹبالر نیمار نے کہا ہے کہ وہ جمعے کو فٹبال ورلڈ کپ کے کوارٹر فائنل میں کولمبیا کا سامنا کرنے کے لیے ذہنی اور جسمانی طور پر تیار ہیں۔

ٹیریسوپولس میں صحافیوں سے بات کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ یہ میچ آسان نہیں ہوگا اور لوگوں کو زیادہ گولوں کی توقع نہیں کرنی چاہیے۔

خبر رساں ادارے روئٹرز کے مطابق نیمار نے کہا: ’ہر بار پارٹی نہیں ہوتی، شو نہیں ہوتا اور چار یا پانچ گولوں سے فتح نہیں ملتی۔ آج کی فٹبال میں مسابقت بہت زیادہ ہوگئی ہے۔‘

ان کا کہنا تھا کہ ’اگر ہمیں ایک گول کی برتری کا دفاع بھی کرنا پڑا تو ہم کریں گے۔ ہم یہاں صرف جیتنے کے لیے آئے ہیں۔‘

نیمار نے صحافیوں کی جانب سے کوارٹر فائنل کو کولمبیا کے مڈفیلڈر اور ٹورنامنٹ کے اب تک کے ٹاپ سکورر جیمز رودریگز اور خود ان کے مابین اصل مقابلہ قرار دینے کی خیال کو رد کیا۔

انھوں نے کہا کہ ’ہم دونوں 22 سال کے ہیں اور نوجوان ہونے کے باوجود وہ اس بات کا مظاہرہ کر رہے ہیں کہ وہ عظیم کھلاڑی ہیں۔ میں بس پرامید ہوں کہ ان کے گول کرنے کا سلسلہ اب ختم ہو جائے گا اور برازیلی ٹیم کا اس ٹورنامنٹ میں سفر جاری رہے گا۔‘

اس ٹورنامنٹ میں برازیلی ٹیم اب تک وہ کارکردگی نہیں دکھا پائی جس کی اس سے توقع کی جا رہی تھی۔ اب تک برازیل نے ٹورنامنٹ میں صرف آٹھ گول کیے ہیں جن میں سے چار نیمار نے کیے۔

چلی کے خلاف پری کوارٹر فائنل میں نیمار کے گھٹنے اور ران پر چوٹ لگی تھی تاہم جمعرات کو انھوں نے کہا کہ وہ اب مکمل طور پر فٹ ہیں۔

انھوں نے اس خیال کو بھی مسترد کر دیا کہ برازیلی کھلاڑی ہوم کراؤڈ کے سامنے فتح کی توقعات کی وجہ سے نفسیاتی دباؤ کا شکار ہو رہے ہیں۔

نیمار نے کہا کہ ’کوئی بھی جذباتی نہیں ہو رہا۔ سب ٹھیک ہے اور ہم کولمبیا کا سامنا کرنے کے لیے تیار ہیں۔‘

خیال رہے کہ چلی کے خلاف میچ میں پنلٹیز پر فتح کے بعد نیمار سمیت کئی برازیلی کھلاڑی آبدیدہ ہوگئے تھے اور اس کے بعد تربیتی سیشن میں کوچ سکولاری نے ایک ماہرِ نفسیات کو بھی طلب کیا تھا۔

برازیل اور کولمبیا کے مابین ورلڈ کپ کا دوسرا کوارٹر فائنل جمعے کو فورٹیزیلا میں برطانوی وقت کے مطابق رات نو بجے کھیلا جائے گا۔

اسی بارے میں