برازیل کی ہار پر ماہرین حیران، اخبارات کے تبصرے

تصویر کے کاپی رائٹ REPROD. DE TV
Image caption برازیل کی اس ہار کو ’میزبان ملک کی ذلت‘ اور ’فٹبال کی تاریخ کی سب سے بڑی شرمندگی‘ قرار دیا جا رہا ہے

برازیل میں جاری فٹبال ورلڈ کپ 2014 کے پہلے سیمی فائنل میں میزبان ملک برازیل کو جرمنی کے ہاتھوں بدترین شکست کا سامنا کرنا پڑا۔

برازیل کی اس ہار کو ’میزبان ملک کی ذلت‘ اور ’فٹبال کی تاریخ کی سب سے بڑی شرمندگی‘ قرار دیا جا رہا ہے۔

جرمنی کی ٹیم کو میچ کے 11 ویں منٹ میں پہلا کارنر ملا جس پر اس نے گول کر دیا۔ جب جرمنی نے پہلا گول کیا تو کسی کے وہم و گمان میں بھی نہ تھا کہ اگلے 11 منٹوں میں برازیلی ٹیم کے ساتھ وہ کچھ ہونے جا رہا ہے جو اس کے ساتھ کبھی بھی نہیں ہوا۔

جرمنی نے میچ کے 23 ویں منٹ میں دوسرا گول، 24 ویں میں تیسرا، 26 ویں میں چوتھا اور 29 ویں منٹ میں پانچواں گول کیا۔

میچ کا پہلا ہاف جب ختم ہوا تو جرمنی کو پانچ گولوں کی برتری حاصل تھی۔

برازیل کی اس بدترین شکست پر جہاں وہاں کے عوام سکتے کی حالت میں ہیں، وہیں دنیا بھی ششدر ہے۔

برازیل کے اخبارات نے اپنی ٹیم کی بدترین شکست کو ’شرمناک‘ قرار دیا ہے جبکہ برازیل کا سوشل میڈیا فٹبال کے شائقین کے ردِعمل کے اٹا پڑا ہے۔

بی بی سی سپورٹس نے اس بات پر ایک نظر ڈالی ہے کہ دنیا نے تاریخی شکست پر کیا ردِ عمل دکھایا ہے۔

بی بی سی کے پریزینٹر گیری لائنکیر کا ردِعمل

تصویر کے کاپی رائٹ Reuters
Image caption ریو ڈی جنیرو کے اخبار ’لانس‘ کی ویب سائٹ نے برازیل کی شکست کو ’تاریخ کی سب سے بڑی شرمندگی‘ قرار دیا

برازیل کی جرمنی کے ہاتھوں سیمی فائنل میں شکست صرف ایک شکست نہیں بلکہ میزبان ملک کے لیے ذلت آمیز شکست ہے۔

ان کا کہنا تھا: ’جو رات میں نے دیکھی وہ فٹبال کی سب سے غیر معمولی رات تھی، وہ نتیجہ جس کا تصور آپ لاکھ برس میں بھی نہیں کر سکتے۔‘

انھوں نے مزید کہا کہ سمجھ میں نہیں آتا کہ جرمنی کی تعریف کریں یا پھر برازیل کی نااہلی پر تنقید۔

گیری لائنکیر نے کہا: ’میچ کے پہلے دس منٹوں میں برازیل نے اچھا کھیل پیش کیا تاہم اس کے اگلے 80 منٹوں میں ہم نے فٹبال کی تاریخ کا بہت حیران کن کھیل دیکھا۔‘

بی بی سی کے پریزینٹر کے مطابق یہ واقعہ کسی چھوٹی موٹی قوم کے ساتھ نہیں ہوا بلکہ برازیل کے خلاف برازیل میں ہوا ہے۔

’یہ ان ناقابلِ یقین چیزوں میں سے ایک تھی جو میں نے دیکھی ہیں۔ برازیل کی ٹیم بالکل ہی ہمت ہار گئی تھی، انھوں نے 18 منٹوں میں پانچ گول کھا لیے۔‘

گیری لائنکیر نے کہا کہ آپ کو جرمنی کو اس بات کا کریڈٹ دینا ہو گا، انھوں نے بہت ہی خوبصورت فٹبال کھیلی، انھوں نے برازیل کی ٹیم پر مکمل ہوم ورک کیا اور ان کی کمزوریوں سے بھرپور فائدہ اٹھایا۔‘

انھوں نے کہا: ’جرمنی گذشتہ 24 سال سے ورلڈ کپ نہیں جیتا اور میرا خیال ہے کہ ان کا انتظار اب ختم ہونے والا ہے۔‘

ریو ڈی جنیرو کے اخبار ’لانس‘ کی ویب سائٹ نے برازیل کی شکست کو ’تاریخ کی سب سے بڑی شرمندگی‘ قرار دیا۔

برازیل کے اخبارات فولہا دے ساؤ پاؤلو کی سرخی تھی: ’تاریخی ذلت۔‘

برازیل کی ایک دوسری نیوز سائٹ اوگلوبو نے لکھا: ’جرمنی نے برازیل کو مار ڈالا اور انھیں تاریخ کی سب سے بری شکست سے دوچار کیا۔‘

جرمنی کے ایک اخبار بلڈ نے لکھا: ’سات ایک کا پاگل پن، برازیل ٹورنامنٹ سے باہر۔‘

ڈیلی ٹیلی گراف نے برازیل کی شکست کو ’ورلڈ کپ کی تاریخ کی سب سے بڑی ذلت‘ قرار دیا۔

اخبار ڈیلی سٹار نے جرمنی کی فتح کو برازیل کو ذبح کرنے سے تعبیر کیا۔

اخبار ڈیلی مرر کے مطابق: ’جرمنی نے برایزل کو ذلت اور ذہنی اذیت سے تباہ کر دیا۔‘

امریکہ کی موجودہ فٹبال ٹیم کے کوچ اور سابق جرمن کھلاڑی یرگن کلنس مین نے کہا: ’آج جرمنی ورلڈ کپ کی تاریخ لکھ رہا ہے، میں انھیں مبارک باد پیش کرتا ہوں، مجھے ان پر فخر ہے۔‘

بھارتی ادا کار شاہ رخ خان نے اس میچ پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا: ’بعض اوقات ہم میں سے بہترین لوگ بھی ناگہانی حالات کا شکار ہو جاتے ہیں۔‘

انگلینڈ کے رونی کے مطابق جرمنی نے آج پھر بہترین کھیل پیش کیا۔

فیفا کے صدر سیپ بلاٹر کا کہنا تھا: ’جرمنی کے سٹرائیکر کلوزے نے برازیل کے خلاف گول کر کے فیفا ورلڈ کپ کی تاریخ میں سب سے زیادہ گول کرنے والے کھلاڑی کا اعزاز اپنے نام کر دیا ہے۔ وہ ٹورنامنٹ کی تاریخ کے بہترین کھلاڑی ہیں۔‘

میچ کے حقائق

تصویر کے کاپی رائٹ AP
Image caption یہ ورلڈ کپ کی تاریخ میں برازیل کی سب سے بڑی شکست ہے
  • ورلڈ کپ کی تاریخ میں یہ پہلا موقع ہے کہ کسی ٹیم نے سیمی فائنل میچ میں سات گول کیے ہیں۔
  • ورلڈ کپ کی تاریخ میں کسی بھی ٹیم نے اس سے پہلے سیمی فائنل کے پہلے ہاف میں پانچ یا پانچ سے زیادہ گول نہیں کیے تھے۔
  • یہ ورلڈ کپ کی تاریخ میں برازیل کی سب سے بڑی شکست ہے۔ اس سے پہلے وہ فرانس کی ٹیم سے سنہ 1998 کے فائنل میں تین صفر کے فرق سے ہارا تھا۔
  • جرمنی نے اس میچ میں کل سات گول کیے جبکہ انگلینڈ نے گذشتہ دو ورلڈ کپ مقابلوں میں کل ملا کر پانچ گول سکور کیے۔
  • برازیل کی جانب سے گول پر پہلا حملہ میچ کے 51 ویں منٹ میں کیا گیا۔

برازیل کی ذلت

برازیل نے اس سے پہلے کسی بھی ورلڈ کپ کے میچ میں اتنے گول نہیں کھائے۔ سنہ 1938 کے عالمی کپ میں برازیل نے پولینڈ کو 5-6 کے فرق سے ہرایا تھا۔

اس شکست سے پہلے سنہ 1920 میں یوروگوائے نے برازیل کو 0-6 سے ہرایا تھا۔

سنہ 1938 کے بعد یہ پہلا موقع ہے کہ برازیل ورلڈ کپ کا سیمی فائنل ہارا ہے۔ اس سے پہلے برازیل چھ سیمی فائنلوں میں فاتح رہا تھا۔

ورلڈ کپ کے سیمی فائنل میں یہ کسی بھی ٹیم کی سب سے بڑی شکست ہے۔ اس سے پہلے سنہ 1954 کے سیمی فائنل میں جرمنی ہی نے آسٹریا کو 1-6 سے شکست دے تھی۔

جرمنی کی حیران کن کارکردگی

تصویر کے کاپی رائٹ AP
Image caption جرمنی نے میچ کے پہلے ہاف کے 29 ویں منٹ تک پانچ گول کیے جو ورلڈ کپ میں کسی بھی ٹیم کی جانب سے کیے جانے والے سب سے زیادہ گول ہیں

جرمنی کے برازیل کے خلاف دوسرے اور چوتھے گول میں صرف 179 سیکنڈوں کا فرق تھا۔

جرمن سٹرائیکر میروسلاف کلوزے نے ورلڈ کپ کی تاریخ میں سب سے زیادہ گول کرنے کا عالمی ریکارڈ قائم کیا۔

جرمنی نے میچ کے پہلے ہاف کے 29 ویں منٹ تک پانچ گول کیے جو ورلڈ کپ میں کسی بھی ٹیم کی جانب سے کیے جانے والے سب سے زیادہ گول ہیں۔

جرمنی نے ورلڈ کپ کی تاریخ میں اب تک سب سے زیادہ 223 گول کر کے برازیل کو پیچھے چھوڑ دیا ہے۔

جرمنی وہ واحد ٹیم ہے جس نے ورلڈ کپ کے سیمی فائنل میں سات گول کیے ہیں۔

اسی بارے میں