نوٹنگھم: انگلینڈ کا آخری وکٹ کے لیے نیا ریکارڈ

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption جوائے روٹ سنچری بنا کر ناقابلِ شکست رہے

نوٹنگم میں کھیلے جانے والے پہلے ٹیسٹ میچ کے چوتھے دن کھیل کے اختتام پر بھارت نے انگلینڈ کے خلاف دوسری اننگز میں تین وکٹوں کے نقصان پر 167 رنز بنا لیے۔

بھارت کو انگلینڈ کے خلاف 128 رنز کی برتری حاصل ہے اور دوسری اننگز میں اس کی سات وکٹیں باقی ہیں۔

میچ کا تفصیلی سکور کارڈ

چوتھے دن کے کھیل کے اختتام پر وراٹ کوہلی اور اجنکیا رہانے کریز پر موجود تھے اور دونوں نے بالترتیب 8 اور 18 رنز بنائے۔

بھارت کی جانب سے مرالی وجے اور شیکھر دھون نے دوسری اننگز کا آغاز کیا اور دونوں بلے بازوں نے پہلی وکٹ کی شراکت میں 49 رنز بنائے۔

ابتدائی نقصان کے بعد مرالی وجے اور چیتیشور پجارا نے بھارت کی جانب سے دوسری وکٹ کے لیے 91 رنز کی شراکت قائم کی۔

انگلینڈ کی جانب سے دوسری اننگز میں معین علی نے دو اور پلنکٹ نے ایک کھلاڑی کو آؤٹ کیا۔

اس سے پہلے ٹیسٹ میچ کے چوتھے دن کھانے کے وقفے کے بعد انگلینڈ کی پوری ٹیم پہلی اننگز میں 496 رنز بنا کر آؤٹ ہو گئی تھی۔

انگلینڈ کی جانب سے جو روٹ اور جیمز اینڈرسن نے 352 رنز 9 وکٹ کے نقصان پر چوتھے دن کے کھیل کا آغاز کیا۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption بھارت کو انگلینڈ کے خلاف 128 رنز کی برتری حاصل ہے اور دوسری اننگز میں اس کی سات وکٹیں باقی ہیں

دونوں بلے بازوں نے آخری وکٹ کے لیے 198 رنز بنا کر ٹیسٹ کرکٹ کی تاریخ میں نیا ریکارڈ قائم کیا۔

گذشتہ برس آسٹریلیا کے فل ہیوز اور ایشن آگر نے انگلینڈ کے خلاف ٹرینٹ بریج ٹیسٹ میں آخری وکٹ کے لیے 163 رنز بنائے تھے۔

ایک موقع پر انگلینڈ کی آٹھ وکٹیں 298 رنز کے مجموعی سکور پر گر چکی تھیں تاہم جو روٹ اور جمیز اینڈرسن نے ذمہ دارانہ بیٹنگ کا مظاہرہ کرتے ہوئے نہ صرف اپنی ٹیم کو مشکل سے نکالا بلکہ آخری وکٹ کے لیے نیا ریکارڈ بھی بنایا۔

اس سے پہلے بھارت کی پوری ٹیم پہلی اننگز میں 457 رنز بنا کر آؤٹ ہو گئی تھی۔

انگلینڈ نے 346 کے مجموعی سکور پر بھارت کے نو کھلاڑی آؤٹ کردیے تھے تاہم انگلینڈ صورت حال سے فائدہ نہ اٹھا سکا۔

بھارت کی جانب سے بھونیشور کمار اور شامی نے آخری وکٹ کی شراکت میں 109 رنز کا اضافہ کیا۔

اسی بارے میں