امریکی کسٹم حکام نے سیمنز کے بلے میں سوراخ کر دیے

تصویر کے کاپی رائٹ Jimmy Neesham
Image caption جمی نیشم نے جب اپنے ٹویٹ کے ساتھ بیٹ کی تصویر پوسٹ کی تو ٹوئٹر پر ’ڈرگ بیٹ‘ کے ٹیگ سے ٹویٹ ہونے لگے

امریکہ کے کسٹم حکام نے ویسٹ انڈیز کے بلے باز لنڈل سیمنز کے بلے میں مبینہ طور پر منشیات کی تلاش میں سوراخ کر دیے۔

سیمنز کے بلے کی تصویر نیوزی لینڈ کے آل راؤنڈر جیمی نیشم نے ٹویٹ کی اور لکھا کہ ’تصور کیجیے کہ آپ کا سامان امریکہ سے گزرے اور منشیات تلاش کے سلسلے میں وہ آپ کے بلے میں سوراخ کر دیں۔‘

اس ٹویٹ سے یہ تصور ابھرا کہ یہ بیٹ جمی نیشم کا تھا اور اس غلط فہمی کو دور کرنے کے لیے نیشم نے دوبارہ ٹویٹ کر کے وضاحت کی کہ ’میں وضاحت کرنا چاہتا ہوں کہ یہ بیٹ لنڈل سیمنز کا تھا۔ میں خوش ہوں کہ اس مصیبت سے بچ نکلا۔‘

در اصل لنڈل سیمنز اور 23 سالہ نيشم کیریبین پریمیئر لیگ میں گیانا امیزن واريئرز کی جانب سے کھیلنے کے لیے امریکہ کے سفر پر تھے۔

حکام نے بعد میں سوراخ شدہ بلا واپس کر دیا گیا تاہم حکام کی جانب سے اس بابت کوئی وضاحت نہیں کی گئی ہے۔

بہر حال اس بات کے شواہد بالکل نہیں ہیں کہ نيشم یا لینڈل پر اس تعلق سے کسٹم افسران کو کوئی شک تھا۔

تصویر کے کاپی رائٹ Twitter

نيشم نے نیوزی لینڈ کی جانب سے ابھی تک چار ٹیسٹ میچ اور 11 ون ڈے میچوں میں شرکت کی ہے۔

جبکہ لینڈل سیمنز نے ویسٹ انڈیز کی جانب سے آٹھ ٹیسٹ، 58 ون ڈے اور 32 ٹی ٹوئنٹی میچوں میں نمائندگی کی ہے۔

تصویر کے کاپی رائٹ PTI
Image caption لینڈل سیمنز نے حال میں ختم ہونے والی آئي پی ایل میں ممبئی کی جانب سے سنچری بنائی تھی

اب اس بلے سے کھیلنے کا تو کوئی امکان نہیں ہے البتہ اسے مستقبل میں کسی میوزیم میں رکھا جا سکتا ہے۔

نيشام کے ٹویٹ کے ردعمل میں نیوزی کرکٹ میوزیم نے ٹویٹ کیا کہ ’بظاہر اب یہ بلا اب استعمال کے قابل نہیں رہا تو کیا آپ اسے ہمیں عطیے میں دینا پسند کریں گے؟ ہمارے ناظرین کے لیے اس کی کہانی دلچسپ ہوگی۔‘

اب جمی نیشم کی جانب سے اس وضاحت کے بعد شاید ویسٹ انڈیز کرکٹ میوزیم کو اس بیٹ میں دلچسپی ہو جائے۔

اسی بارے میں