سعید اجمل کے بولنگ ایکشن پر ایک بار پھر اعتراض

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption گال ٹیسٹ میں سعید اجمل نے پہلی اننگز میں 168 رنز کے عوض پانچ وکٹیں حاصل کی تھیں

پاکستانی کرکٹ ٹیم کے آف سپنر سعید اجمل ایک بار پھر مشکوک بولنگ ایکشن کی زد میں آگئے ہیں۔

پاکستان اور سری لنکا کے درمیان گال میں کھیلے گئے پہلے ٹیسٹ میچ کے میچ آفیشلز نے پاکستانی کرکٹ ٹیم کے منیجر معین خان کو جو رپورٹ دی ہے اس میں کہا گیا ہے کہ سعید اجمل کی بعض گیندیں قوانین پر پوری نہیں اتر رہی تھیں لہٰذا انھیں اپنے بولنگ ایکشن کی درستگی کے لیے آئی سی سی کے مروجہ قوانین کے مطابق بائیو مکینک تجزیے کے مرحلے سے گزرنا ہوگا۔

آئی سی سی کا کہنا ہے کہ سعید اجمل کو اس تجزیے کے لیے 21 روز درکار ہوں گے اور اس تجزیے کا نتیجہ آنے تک وہ انٹرنیشنل کرکٹ کھیلتے رہیں گے۔

گال ٹیسٹ میں سعید اجمل نے پہلی اننگز میں 168 رنز کے عوض پانچ وکٹیں حاصل کی تھیں تاہم وہ دوسری اننگز میں 39 رنز کے عوض کوئی وکٹ حاصل نہیں کر سکے۔

یہ دوسرا موقع ہے کہ سعید اجمل کے بولنگ ایکشن پر میچ آفیشلز نے اعتراض کرتے ہوئے رپورٹ دی ہے۔ اس سے قبل سنہ 2009 میں ان کے بولنگ ایکشن پر اعتراض ہوا تھا جس کی وجہ ان کی مخصوص گیند’ دوسرا‘ تھی، تاہم بعد میں اسے کلیئر کر دیا گیا تھا۔

سعید اجمل 34 ٹیسٹ میچوں میں 174 وکٹیں حاصل کر چکے ہیں۔ ون ڈے میں ان کی وکٹوں کی تعداد 182 ہے جبکہ ٹی ٹوئنٹی میں وہ اس فارمیٹ میں 85 وکٹوں کےساتھ دنیا میں سب سے زیادہ وکٹیں حاصل کرنے والے بولر ہیں۔

اسی بارے میں