’مصباح الحق ورلڈ کپ تک کپتان رہیں گے‘

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption جب تک پاکستان میں حالات بہتر نہیں ہوتے بڑی ٹیموں کا یہاں آ کر کھیلنا ممکن نہیں: شہر یار خان

پاکستان کرکٹ بورڈ کے نئے چیئرمین شہریارخان نے مصباح الحق پر مکمل اعتماد ظاہر کرتے ہوئے کہا ہے کہ وہ ورلڈ کپ تک کپتان رہیں گے۔

شہریار خان نے عہدہ سنبھالنے کے بعد پیر کو اپنی پہلی پریس کانفرنس میں کہا کہ وہ پاکستانی ٹیم میں تسلسل دیکھنا چاہتے ہیں لہٰذا سری لنکا کے خلاف سیریز ہارنے کے باوجود وہ کپتان تبدیل نہیں کریں گے۔

شہریارخان نے یہ بیان ایک ایسے وقت دیا ہے جب سری لنکا کے خلاف ٹیسٹ سیریز میں وائٹ واش کے بعد مصباح الحق کو تنقید کا سامنا ہے۔

یاد رہے کہ سابق چیئرمین نجم سیٹھی نے مصباح الحق کو ورلڈ کپ تک کپتان بنانے کا اعلان کیا تھا اور اس کا سبب انھوں نے یہ بتایا تھا کہ ان کے اس اقدام سے ٹیم میں گروہ بندی کا خاتمہ ہوگیا ہے۔

شہر یار خان نے کہا کہ ان کی ذاتی رائے یہی ہے کہ مصباح الحق کو ہی عالمی کپ تک کپتان رہنا چاہیے۔

کرکٹ بورڈ کے نئے چیئرمین نے کہا کہ سری لنکا کے خلاف شکست تباہ کن نہیں ہے البتہ اس سے دھچکہ ضرور پہنچا ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ کوئی بھی کپتان پرفیکٹ نہیں ہوتا۔

انھوں نے انضمام الحق کی مثال دیتے ہوئے کہا کہ بورڈ کے چیئرمین کی حیثیت سے انہوں نے انضمام الحق کی ہمیشہ حمایت کی حالانکہ ان کی کپتانی پر بھی لوگ اعتراض کرتے تھے کہ وہ دفاعی انداز کے کپتان ہیں اور فیلڈ میں بھی ُسست ہیں۔ یہ اور بات ہے کہ انضمام الحق نے انھیں اوول ٹیسٹ میں مایوس کیا۔

شہر یارخان نے کہا کہ انھوں نے پاکستان کرکٹ بورڈ کے چیئرمین کا عہدہ دوبارہ اس لیے سنبھالا ہے کیونکہ وہ سپریم کورٹ کی عزت کرتے ہیں جس کا یہ کہنا تھا کہ چیئرمین کی بار بار کی تبدیلی اور میوزیکل چیرگیم سے کھیل پر برا اثر پڑ رہا تھا۔

انھوں نے کہا کہ جب سپریم کورٹ نے دونوں فریقین کے بجائے کسی تیسرے شخص کو بورڈ میں لانے کے لیے کہا تو پھر انھوں نے اپنے سابقہ موقف میں تبدیلی لاتے ہوئے الیکشن میں حصہ لینے کی ہامی بھری کیونکہ ان کے بہی خواہ چاہتے تھے کہ وہ اپنے وسیع تجربے کی بنیاد پر کرکٹ کے معاملات دوبارہ سنبھال لیں تاکہ کرکٹ اپنے اصل رخ کی جانب آ سکے۔

شہریارخان نے کہا کہ جب تک پاکستان میں حالات بہتر نہیں ہوتے بڑی ٹیموں کا یہاں آ کر کھیلنا ممکن نہیں۔

اسی بارے میں