سری لنکا کا کلین سویپ، مہیلا الوداع

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption مہیلا جےوردھنے کو ان کے آخری میچ میں گارڈ آف آنر دیا گیا

سری لنکا نے پاکستان کو سیریز میں کلین سویپ کر کے اپنے ہیرو مہیلا جے وردھنے کو ٹیسٹ کرکٹ سے شاندار انداز میں رخصت کیا۔

پاکستان کی شکست کا سکرپٹ چوتھے روز اسی وقت لکھ دیا گیا تھا جب 271 رنز کے تعاقب میں اس کی سات وکٹیں صرف 127 رنز پر زمیں بوس ہوچکی تھیں اور آخری دن کی رسمی کارروائی صرف سرفراز احمد کی مزاحمت تک ہی محدود تھی۔ جیسے ہی وہ آؤٹ ہوئے، سنہالیز اسپورٹس کلب گراؤنڈ میں جشن شروع ہو چکا تھا۔

سرفراز احمد 55 رنز بناکر ویلیگیدرا کی گیند پر ڈیپ سکویر لیگ پر سنگاکارا کے ہاتھوں کیچ ہوئے۔ یہ ان کی 50 سے زائد رنز کی مسلسل چوتھی اننگز تھی اس طرح وہ کلائیڈ والکوٹ، بریڈ ہیڈن اور ایڈم گلکرسٹ کے بعد ٹیسٹ کرکٹ کی مسلسل چار اننگز میں 50 اور اس سے زائد رنز اسکور کرنے والے چوتھے وکٹ کیپر بن گئے ۔

اس ریکارڈ میں اینڈی فلاور سات مسلسل اننگز میں 50 یا زائد رنز بناکر سرفہرست ہیں۔

وہاب ریاض کو رنگانا ہیراتھ نے کوشل سلوا کے ہاتھوں کیچ کرا کر پاکستانی اننگز کا خاتمہ کر دیا کیونکہ جنید خان بیٹنگ کے قابل نہ تھے۔

سری لنکا نے آخری دن یہ جیت صرف 73 گیندوں میں مکمل کر لی۔

رنگانا ہیرتھ نے 57 رنز کے عوض پانچ وکٹیں حاصل کیں۔ پہلی اننگز میں انہوں نے 127 رنز دے کر نو کھلاڑیوں کو آؤٹ کیا تھا۔ اس طرح میچ میں انھوں نے 184 رنز دے کر 14 وکٹیں حاصل کیں جو ان کے کریئر کی بہترین کارکردگی ہے۔

رنگانا ہیرتھ پاکستان کے خلاف ٹیسٹ میچوں میں 88 وکٹیں حاصل کرچکے ہیں جو کپل دیو کی 99 اور شین وارن کی 90 وکٹوں کے بعد تیسری بڑی تعداد ہے۔

رنگانا ہیراتھ نے دو ٹیسٹ میچوں کی سیریز میں 23 وکٹیں حاصل کرکے نیا ریکارڈ بھی قائم کیا ۔ اس سے قبل مرلی دھرن نے 2006 میں جنوبی افریقہ کے خلاف دو میچوں کی سیریز میں 22 وکٹیں حاصل کی تھیں۔

سری لنکا نے گال ٹیسٹ سات وکٹوں سے جیتا تھا اور کولمبو کی اس جیت کے نتیجے میں اس نے پہلی بار پاکستان کے خلاف کلین سویپ کیا ہے۔

مہیلا جے وردھنے کے شاندار ٹیسٹ کریئر کا اختتام اس سے زیادہ یادگار نہیں ہوسکتا تھا کہ انھوں نے اپنی آخری ٹیسٹ اننگز میں نصف سنچری اسکور کی اور ان کی ٹیم ٹیسٹ میچ جیتنے میں بھی کامیاب ہوئی۔

کولمبوٹیسٹ کے دوران وہ دونوں اننگز میں بیٹنگ کے لیے آئے تو پاکستانی ٹیم نے بھی انہیں گارڈ آف آنر دیا اور ان کے نالندا کالج کے طالب علم بھی باؤنڈری لائن پر دو رویہ ان کا استقبال کرنے کے لیے موجود رہے۔

جب سری لنکا نے ٹیسٹ میچ جیتا تو مہیلا کو ویلیگیدرا اور پرساد نے کاندھوں پر اٹھالیا اور پورے میدان کا چکر لگایا اس موقعے پر پاکستانی کرکٹرز نے بھی مہیلا کو گلے لگا کر مبارکباد دی۔

سری لنکا کے صدر مہندا راجا پاکسے بھی مہیلا جے وردھنے کو مبارک باد دینے کے لیے ایس ایس سی گراؤنڈ میں موجود تھے۔ مہیلا ان کے پاس گئے اور مبارک باد وصول کی۔

اختتامی تقریب کے دوران بھی صدر پاکسے نے مہیلا کے پاس آ کر انھیں تحفہ پیش کیا۔

پاکستانی آف سپنر سعید اجمل کے ستارے گردش میں ہیں۔ بولنگ ایکشن رپورٹ ہونے کے بعد اب آئی سی سی نے انھیں ان کے نامناسب رویے پر متنبہ کیا ہے۔

میچ کے چوتھے دن سری لنکا کی اننگز کے دوران انھوں نے نامناسب زبان استعمال کی، جسے سٹمپ مائیک کے سبب ٹی وی پر سب نے سنا جس پر ان کی سرزنش کرتے ہوئے آئندہ محتاط رہنے کے لیے کہا گیا ہے۔

سری لنکا کی ٹیم جیت کا جشن منا رہی ہے لیکن پاکستانی ٹیم کے لیے لمحۂ فکریہ ہے کہ بیٹنگ کی افراتفری نے اسے سری لنکا کے سامنے سرنگوں کردیا اور اب اسے آسٹریلیا کی مضبوط ٹیم کا سامنا کرنا ہے۔

اسی بارے میں