زمبابوے نے آسٹریلیا کو پچھاڑ دیا

تصویر کے کاپی رائٹ AP
Image caption چگمبورا کی نصف سنچری نے زمبابوے کو ایک یادگار فتح دلوا دی

زمبابوے نے اتوار کے روز 31 برس بعد آسٹریلیا کو ایک روزہ میچ میں شکست سے دوچار کر کے ایک یادگار فتح کی ہے۔

اتوار کے روز ہرارے کے میدان میں کھیلا جانے والے ایک روزہ میچ دونوں ملکوں کے مابین کھیلا جانے والے 29ویں میچ تھا جس میں زمبابوے نے صرف دو جیتے ہیں۔آخری بار زمبابوے نے 1983 کے ورلڈ کپ میں آسریلیا کو ہرایا تھا اور یہ دونوں ملکوں کے مابین پہلا ایک روزہ میچ تھا۔

زمبابوے کی ٹیم کے کپتان ایلٹن چگمبورا نے ناقابل شکست نصف سنچری سکور کر کے آسٹریلیا کے 210 کے ہدف کو عبور کر لیا۔

آسٹریلی کی ٹیم پہلی بیٹنگ کرتے ہوئے صرف 209 رنز بنا سکی اور سوائے آسٹریلوی کپتان مائیکل کلارک کے کوئی بھی آسٹریلوی کھلاڑی زمبابوے کے سپنروں کا مقابلہ نہ کر سکا۔ ایک موقع پر صرف 97 کے مجموعی سکور پر آسٹریلیا کے پانچ بیٹسمین پویلین لوٹ چکے تھے۔ مائیکل کلارک نے وکٹ کیپر بریڈ ہیڈن کے ساتھ مل کر پچاس رنز کی پارٹنرشپ بنائی لیکن وہ ایک بار پھر پھٹے کی تکلیف میں مبتلا ہو کر گراؤنڈ سے واپس چلےگئے۔

میچ کے بعد آسٹریلوی ٹیم نے اعلان کیا ہےکہ مائیکل کلارک رواں سیریز میں مزید حصہ نہیں لیں گے اور وہ واپس آسٹریلیا جا رہے ہیں جہاں ان کی زخم کی نوعیت کو جانچنے کے لیے سکین ٹیسٹ کیے جائیں گے۔

آسٹریلیا اور جنوبی افریقہ زمبابوے میں جاری ایک روزہ میچوں کے سہہ فریقی ٹورنامنٹ میں حصہ لے رہے ہیں۔ منگل کے روز آسٹریلیا اور جنوبی افریقہ کےمابین مقابلہ ہو گا۔

زمبابوے کے کپتان ایلٹن چگمبورا جب میدان میں اترے تو ان کی بیٹنگ بھی لڑکھڑا رہی تھی اور210 رنز کے ہدف کے تعاقب میں زمبابوے کی ٹیم کے پانچ کھلاڑی 106 کے مجموعی سکور پر پویلین لوٹ چکے تھے۔ لیکن ایلٹن چگمبورا نے نصف سنچری بنا کر ٹیم کو یادگار فتح سے ہمکنار کر دیا۔