امریکی کھلاڑی کو میدان میں سجدہ کرنے پر سزا

تصویر کے کاپی رائٹ USATODAY
Image caption حسین عبداللہ نے کھیل کے چوتھے کوارٹر میں ٹچ ڈاؤن کے بعد سجدہ کیا تھا

امریکی میڈیا کے مطابق پیر کے روز امریکن فٹبال ٹیم کینسس چیفس سٹی کے کھلاڑی حسین عبداللہ پر ٹچ ڈاؤن کرنے کے بعد سجدہ کرنے پر 15 یارڈ کی پنلٹی عائد کر دی گئی۔

حسین عبداللہ نے کھیل کے چوتھے کوارٹر میں ٹچ ڈاؤن کے بعد سجدہ کیا تھا۔

اطلاعات کے مطابق عبداللہ نے نیو انگلینڈ پیٹریئٹس کے خلاف چوتھے کوارٹر میں 39 یارڈ سے مخالف کھلاڑی کا پاس لے کر ٹچ ڈاؤن کیا۔ تاہم ریفری نے 29 سالہ عبداللہ پر ٹچ ڈاؤن کی خوشی منانے پر قوانین کی خلاف ورزی کرنے پر 15 یارڈ کی پنلٹی عائد کر دی۔

نیشنل فٹ بال لیگ کے سابق ریفری مائیک پریرا نے کہا کہ گھٹنوں پر بیٹھ کر دعا کرنا قوانین کی خلاف ورزی نہیں ہے۔

عبداللہ ایک متقی مسلمان ہیں اور انھوں نے سنہ 2012 کا سیزن نہیں کھیلا تھا کیونکہ وہ اپنے بھائی حمزہ کے ہمراہ حج پر گئے تھے۔

حالیہ سیزن میں این ایف ایل پر سماجی ایشوز کے حوالے سے کافی تنقید کی جا رہی ہے اور اس پنلٹی کی وجہ سے این ایف ایل کو مزید تنقید کا نشانہ بنایا جائے گا۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption عبداللہ نے نیو انگلینڈ پیٹریئٹس کے خلاف چوتھے کوارٹر میں 39 یارڈ سے مخالف کھلاڑی کے پاس کو لیا اور ٹچ ڈاؤن کیا

واضح رہے کہ سنہ 2011 کے سیزن کے دوران این ایف ایل کھلاڑی ٹم ٹیبو اپنے گھٹنے کے بل بیٹھے اور دعا کی۔ اس کے بعد سے اس عمل کو ’ٹیبوئنگ‘ (Tebowing) کے نام سے جانا جاتا ہے۔

تاہم ٹم ٹیبو کو اس پر پنلٹی نہیں لگائی گئی بلکہ یہ عمل اس سیزن میں بہت مشہور ہوا۔

سماجی رابطوں کی ویب سائٹ پر عبداللہ پر پنلٹی عائد کرنے پر تنقید کی جا رہی ہے۔

امریکی میڈیا کا کہنا ہے کہ این ایف ایل کو منگل کی صبح اس بات کی وضاحت کرنی ہو گی کہ آیا ریفری نے غلطی سے پنلٹی عائد کی ہے یا جان بوجھ کر۔