’نتیجے سے مایوسی، فائٹ بیک پر خوشی‘

آسٹریلوی کپتان مائیکل کلارک نے دبئی ٹیسٹ کی شکست پر شدید مایوسی کا اظہار کیا ہے۔ تاہم ان کا کہنا ہے آخری دن سٹیو سمتھ اور مچل جانسن نے جس طرح مقابلہ کیا اس پر انہیں خوشی ہے۔

مائیکل کلارک کا کہنا ہے کہ فائٹ کرنا آسٹریلوی ٹیم کی خصوصیت ہے اور جانسن اور سمتھ نے یہ دکھا دیا کہ وہ آخری دن وکٹیں آسانی سے بولرز کو دینے کے لیے تیار نہیں تھے لیکن انھوں نے فراخدلی سے یہ تسلیم کیا کہ پاکستانی ٹیم نے انہیں آؤٹ کلاس کردیا۔

آسٹریلوی ٹیم کی ایشیائی وکٹوں پر سپنروں کے خلاف مایوس کن کارکردگی کا اندازہ اس بات سے لگایا جاسکتا ہے کہ اس نے چھ سال میں چودہ میں سے دس ٹیسٹ ہارے ہیں اور صرف ایک میں اسے کامیابی حاصل ہوسکی ہے۔

مائیکل کلارک یہ ماننے کے لیے تیار نہیں کہ بھارت کے خلاف سیریز کے تمام چاروں ٹیسٹ ہارنے کے بعد ان کی ٹیم نے کچھ نہیں سیکھا۔

ان کا کہنا ہے کہ ان کی ٹیم کی کارکردگی میں اس دورے کے بعد بہتری آئی ہے ۔

انھوں نے کہا کہ چونکہ پاکستانی بیٹسمینوں کو ان کنڈیشنز میں کھیلنے کا تجربہ ہے لہذا انھوں نے آسٹریلوی سپنروں کے خلاف کسی دشواری کے بغیر بیٹنگ کی ۔

مائیکل کلارک کا کہنا ہے کہ آسٹریلوی ٹیم کو شکست بالکل پسند نہیں ہے دوسرے ٹیسٹ میں ابھی چند دن باقی ہیں اور وہ پرامید ہیں کہ ان کی ٹیم اچھی کارکردگی کا مظاہرہ کرے گی۔

اسی بارے میں