پاکستان کا فاتح سکواڈ برقرار رکھنے کا فیصلہ

تصویر کے کاپی رائٹ AFP

پاکستان کرکٹ بورڈ نے آسٹریلیا کے خلاف ابوظہبی کے شیخ زید سٹیڈیم میں جمعرات سے شروع ہونے والے دوسرے ٹیسٹ میچ کے لیے دبئی ٹیسٹ کے فاتح سکواڈ کو برقرار رکھنے کا فیصلہ کیا ہے۔

سرکاری خبر رساں ایجنسی اے پی پی کے مطابق بورڈ کے چیئرمین شہر یار خان نے پیر کو سلیکشن کمیٹی کی جانب سے آسٹریلیا کے خلاف پہلا ٹیسٹ میچ جیتنے والی پاکستانی کرکٹ ٹیم کو دوسرے ٹیسٹ کے لیے برقرار رکھنے کی سفارشات کی منظوری دی۔

پاکستان نے دبئی میں کھیلے جانے والے پہلے ٹیسٹ میچ میں آسٹریلیا کو 221 رنز سے شکست دے کر دو میچوں پر مشتمل سیریز میں ایک صفر کی برتری حاصل کی ہے۔

چیف سلیکٹر معین خان نے کہا کہ کرکٹ بورڈ نے دوسرے ٹیسٹ کے لیے دبئی ٹیسٹ جیتنے والے 16 رکنی فاتح سکواڈ کو برقرار رکھنے کا فیصلہ کیا تاہم میچ کے حتمی 11 کھلاڑیوں کا انتخاب جمعرات کو پچ دیکھ کر کیا جائے گا۔

ان کا کہنا تھا کہ سلیکٹرز پہلے ٹیسٹ میچ میں پاکستانی کرکٹ ٹیم کی کارکردگی سے خوش ہیں تاہم اس فتح کا کریڈٹ یونس خان کو جانا چاہیے جنھوں نے اپنے تجربے کو بروئے کار لاتے ہوئے دبئی ٹیسٹ کی دونوں اننگز میں سنچریاں سکور کیں۔

معین خان کے مطابق احمد شہزاد، اسد شفیق، سرفراز احمد، ذوالفقار بابر اور یاسر شاہ نے بھی آسٹریلیا کے خلاف عمدہ کارکردگی کا مظاہرہ کیا۔

انھوں نے پاکستان کو آسٹریلیا کے متوقع کم بیک سے بھی خبردار کرتے ہوئے کہا: ’آسٹریلیا خطرناک ٹیم ہے اور اس میں واپس آنے کی بھرپور صلاحیت ہے۔ ایسے میں ہمیں ضرورت سے زیادہ اعتماد اور لاپروائی سے گریز کرنا چاہیے۔‘

معین خان نے کہا کہ ’ابوظہبی میں کھلاڑیوں کو اضافی فائدہ ہو گا، اگر جیت گئے تو آئی سی سی کی درجہ بندی میں وہ جنوبی افریقہ اور آسٹریلیا کے بعد تیسرے نمبر پر آ جائیں گے۔ تاہم، یہ کوئی آسان ہدف نہیں اور اس کو حاصل کرنے کے لیے ہمیں سخت محنت کرنا ہو گی۔‘

آسٹریلیا کے خلاف 30 اکتوبر سے شروع ہونے والے دوسرے ٹیسٹ میچ کے لیے پاکستانی ٹیم کا سکواڈ ان کھلاڑیوں پر مشتمل ہے:

مصباح الحق (کپتان)، احمد شہزاد، اسد شفیق، اظہر علی، احسان عادل، حارث سہیل، عمران خان، محمد حفیظ، محمد طلحہ، راحت علی، سرفراز احمد، شام مسعود، توفیق عمر، یاسر شاہ، یونس خان اور ذوالفقار بابر۔

اسی بارے میں