اصل اہمیت پانچ دن اچھی کرکٹ کھیلنے کی ہے: کلارک

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption ’ان کنڈیشنز میں 20 وکٹیں حاصل کرنے کے لیے مواقع پیدا کرنے ہوں گے‘

آسٹریلوی کپتان مائیکل کلارک کا کہنا ہے کہ وہ پہلے کرکٹ ٹیسٹ میں پاکستان کے ہاتھوں شکست کے بعد خود پر کسی قسم کا دباؤ محسوس نہیں کر رہے ہیں۔

انھوں نے کہا کہ اصل اہمیت پانچ دن میں اچھی کرکٹ کھیلنے کی ہے اور اگر ان کی ٹیم ایسا کرنے میں کامیاب ہوگئی تو یقیناً وہ دوسرا ٹیسٹ میچ جیت سکتی ہے۔

آسٹریلیا کو دبئی میں کھیلے گئے پہلے ٹیسٹ میچ میں 221 رنز سے شکست کا سامنا کرنا پڑا تھا۔

کلارک اس ٹیسٹ میچ کی دونوں اننگز میں صرف دو اور تین رنز بنا سکے تھے۔

پاکستان اور آسٹریلیا کے مابین دو میچوں کی سیریز کا آخری ٹیسٹ جمعرات سے ابوظہبی میں شروع ہو رہا ہے۔

مائیکل کلارک کا کہنا ہے وہ اس ٹیسٹ کو کسی بھی دوسرے ٹیسٹ میچ سے مختلف نہیں سمجھتے۔

ان کے مطابق بحیثیت کپتان ان کی توقعات ہمیشہ بلند رہتی ہیں کہ وہ رنز کریں اور ان کی کارکردگی ٹیم کی جیت میں کام آئے۔

انھوں نے کہا کہ دبئی ٹیسٹ میں پاکستانی بیٹسمینوں نے منصوبہ بندی کے مطابق بیٹنگ کی جس کی سب سے بڑی مثال یونس خان ہیں۔

کلارک نے کہا کہ ان کنڈیشنز میں 20 وکٹیں حاصل کرنے کے لیے مواقع پیدا کرنے ہوں گے۔

آسٹریلوی کپتان نے یہ بھی کہا کہ ٹاس کی اہمیت اس میچ بھی اہم ہوگی اور ان کنڈیشنز میں پہلے بیٹنگ کے فائدے زیادہ ہیں۔

اسی بارے میں