2015 افریقہ کپ کی میزبانی: مراکش نے تصدیق نہیں کی

Image caption کپ کی میزبانی کرنے کا فیصلہ صحت کی وجوہات سے جڑا ہوا ہے کیونکہ ایبولا وائرس کے پھیلاؤ کا خطرہ ہے: مراکش

مراکش نے ڈیڈ لائن ختم ہونے تک اس بات کی تصدیق نہیں کی ہے کہ وہ جنوری میں ہونے والا 2015 افریقہ فٹ بال کپ کی میزبانی کر رہا ہے۔

مراکش نے افریقہ کپ کو ایبولا وائرس کے پھیلاؤ کے باعث ملتوی کرنے کی درخواست کی تھی۔

تاہم افریقہ کی فٹ بال کنفیڈریشن نے ان ممالک کی درخواست کو مسترد کرتے ہوئے مراکش کو 8 نومبر تک اس بات کی تصدیق کرنے کا کہا تھا کہ آیا وہ کپ کی میزبانی کر رہا ہے یا نہیں۔

اسی ڈیڈ لائن میں دیگر ممالک کو بھی بھی بتایا تھا کہ اگر مراکش میزبانی نہیں کرتا تو اور کون سے ممالک ہیں جو کپ کی میزبانی کے لیے تیار ہیں۔

مراکش کی وزارت کھیل نے ایک بیان میں کہا ہے ’کپ کی میزبانی کرنے کا فیصلہ صحت کی وجوہات سے جڑا ہوا ہے کیونکہ ایبولا وائرس کے پھیلاؤ کا خطرہ ہے۔‘

2015 کپ کے منعقد ہونے کا حتمی فیصلہ 11 نومبر کو قاہرہ میں کیا جائے گا جب افریقہ کی فٹ بال کنفیڈریشن کے ایگزیکٹو بورڈ کا اجلاس ہو گا۔

مراکش نے درخواست کی تھی کہ کپ جنوری کے بجائے جون یا جنوری 2016 میں منعقد کیا جائے۔

تاہم کنفیڈریشن نے متفقہ طور پر فیصلہ کیا کہ کپ و ملتوی نہیں کیا جائے گا۔ افریقہ کم جنوری 17 سے 8 فروری تک کھیلا جائے گا۔

مراکش نے آخری بار کپ کی میزبانی 1988 میں کی تھی اور اگلہ ماہ یعنی دسمبر میں مراکش میں فیفا کلب ورلڈ کپ منعقد ہو رہا ہے۔

افریقہ کی فٹ بال کنفیڈریشن کےسیکریٹری جنرل حشم العمرانی نے بی بی سی کو بتایا ’ہم کسی قسم کا رسک نہیں لیں گے اگر ہمیں تھوڑا سے بھی شک ہو کہ کپ کی میزبانی سے کسی قسم کا صحت کا مسئلہ ہو سکتا ہے۔‘

انھوں نے مزید کہا کہ مراکش کی درخواست مسترد کرنے میں عالمی ادارہ صحت سے کیے گیا مشورہ بہت اہمیت رکھتا ہے۔

اسی بارے میں