نیوزی لینڈ کے بولروں کی ایک نہ چلی

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption پہلے پانچ بیٹسمینوں کا 80 یا اس سے زائد رنز سکور کرنے کا ٹیسٹ کرکٹ میں یہ پہلا موقع ہے

ابوظہبی کے شیخ زید سٹیڈیم میں چند روز قبل آسٹریلوی بولنگ پاکستانی بیٹسمینوں کے سامنے بے بس نظر آئی تھی اور اب نیوزی لینڈ کی بولنگ کو انھیں قابو کرنے کا کوئی طریقہ نہیں سوجھ رہا۔

پہلے ٹیسٹ کے دوسرے دن پاکستان نے صرف تین وکٹوں کے نقصان پر 566 رنز بناکر پہلی اننگز ڈکلیئر کر دی۔

اس اننگز میں جو پاکستانی بیٹسمین بھی کریز پر آیا، اس نے رنز کی بہتی گنگا میں ہاتھ دھوئے۔ یہ ٹیسٹ کرکٹ میں کسی بھی ٹیم کے پہلے پانچ بیٹسمینوں کا 80 یا اس سے زائد رنز سکور کرنے کا پہلا موقع ہے۔

اوپنر احمد شہزاد کی کریئر بیسٹ اننگز کے بعد یونس خان اور کپتان مصباح الحق نے بھی سنچریاں بنا ڈالیں۔

یونس خان کی یہ پانچویں اننگز میں چوتھی سنچری ہے جبکہ کپتان مصباح الحق کی یہ مسلسل تیسری سنچری ہے۔

ایک ایسی وکٹ پر جس میں بولروں کے لیے کچھ بھی نہیں، نیوزی لینڈ کی بولنگ کے حوصلے پست ہوگئے لیکن آسٹریلیا کی طرح نیوزی لینڈ کی ناقص فیلڈنگ نے بھی پاکستانی بیٹسمینوں کو مکمل تعاون فراہم کیا، اور کمال فراخدلی سے انھیں کئی زندگیاں عطا کیں۔

آج صبح احمد شہزاد اور اظہرعلی نے 269 رنز ایک کھلاڑی آؤٹ پر اننگز شروع کی۔ کھانے کے وقفے سے قبل آخری اوور میں احمد شہزاد کورے اینڈرسن کے باؤنسر پر کنپٹی پر گیند لگنے سے لڑکھڑائے اور بلا وکٹوں میں جا لگا۔

سکین رپورٹ کے مطابق احمد شہزاد کی کھوپڑی میں معمولی سا فریکچر ہوا ہے۔

احمد شہزاد نے 17 چوکوں اور ایک چھکے کی مدد سے 176 رنز سکور کیے جو ان کے ٹیسٹ کریئر کا بہترین انفرادی سکور ہے۔

احمد شہزاد اور اظہرعلی نے دوسری وکٹ کی شراکت میں169 رنز کا اضافہ کیا۔

اظہرعلی نے اسی میدان میں آسٹریلیا کے خلاف ٹیسٹ کی دونوں اننگز میں سنچریاں سکور کی تھیں، لیکن آج انھوں اور سنچری کا موقع گنوا دیا۔ وہ 87 رنز بناکر لیگ اسپنر سودی کی گیند پر بولڈ ہوگئے۔

یونس خان اور مصباح الحق کی شراکت نے سکور میں 193 رنز کا اضافہ کیا۔

یونس خان نے ٹیسٹ میچوں میں 28 ویں سنچری 99 کے سکور پر ٹم ساؤدی کے ڈراپ کیچ کی بدولت دس چوکوں کی مدد سے مکمل کی۔

مصباح الحق کے دو کیچ 17 اور 20 رنز پر مارک کریگ اور نیشام نے ڈراپ کیے۔ دونوں مرتبہ بد قسمت بولر ساؤدی تھے۔

مصباح الحق نے اپنی آٹھویں ٹیسٹ سنچری نو چوکوں اور ایک چھکے کی مدد سے مکمل ہوتے ہی اننگز ڈکلیئر کر دی۔

نیوزی لینڈ کے اوپنرز برینڈن مکلم اور ٹام لیتھم سات اوورز کھیل کر 15 رنز بنا گئے لیکن مہمان ٹیم کا اصل امتحان ابھی باقی ہے۔

اسی بارے میں