پاکستان نے نیوزی لینڈ کو سات وکٹوں سے شکست دے دی

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption پاکستانی بولرز نے ابتدائی تین اوورز میں تین وکٹیں حاصل کیں

دبئی میں سیریز کے پہلے ٹی 20 کرکٹ میچ میں پاکستان نے نیوزی لینڈ کو سات وکٹوں سے شکست دے کر دو میچوں کی سیریز میں ایک صفر کی برتری حاصل کر لی ہے۔

پاکستان نے ٹاس جیت کر نیوزی کو پہلے بیٹنگ کی دعوت دی جس نے سات وکٹوں کے نقصان پر 135 رنز بنائے۔

جواب میں پاکستان نے 136 رنز کا ہدف اننگز کے آخری 20ویں اوور کی پہلی گیند پر تین وکٹ کے نقصان پر حاصل کر لیا۔

میچ کا تفصیلی سکور کارڈ

پاکستان بمقابلہ نیوزی لینڈ: تصاویر میں

پاکستان اننگز کا خاص بات اوپنر سرفراز احمد کی ناٹ آوٹ رہتے ہوئے 76 رنز کی اننگز تھی۔ عمر اکمل 27 رنزپر ناٹ آؤٹ رہے۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption سرفراز احمد نے عمدہ بیٹنگ کی اور دو چھکوں اور 8 چوکوں کی مدد سے 76 رنز بنائے

اس سے پہلے پاکستان کے لیے سرفراز احمد اور اویس ضیا نے اننگز شروع کی اور 50 رنز کی شراکت قائم کی جس کا خاتمہ اویس کے رن آؤٹ ہونے پر ہوا۔ انھوں نے 20 رنز بنائے۔

اس کے بعد محمد حفیظ بیٹنگ کے لیے آئے اور صرف دو رنز بنانے کے بعد وکٹ کیپر کے ہاتھوں رن آؤٹ ہو گئے۔

حفیظ کے بعد حارس بیٹنگ کے لیے آیے لیکن زیادہ دیر کریز پر نہیں ٹھہرے اور 11 رنز بنا کر کیچ آؤٹ ہو گئے۔

اس سے پہلے ساتویں اوور میں پاکستان کو ایک چانس اس وقت بھی ملا جب امپائر نے نیتھن میککلم کی گیند پر اویس ضیا کو ایل بی ڈبلیو آؤٹ نہیں دیا جبکہ ہاک آئی کے مطابق گیند وکٹوں کے بالکل سامنے ان کی ٹانگ پر لگی تھی۔

نیوزی لینڈ نے مقررہ 20 اوورز میں سات وکٹوں کے نقصان پر 135 رنز بنائے تھے جس میں مہمان ٹیم کے لیے کورے اینڈرسن چار چھکوں اور ایک چوکے کی مدد سے 48 رنز بنا کر ٹاپ سکورر رہے۔

ان کے علاوہ گپٹل اور رونکی نے بالترتیب 32 اور 33 رنز کی اننگز کھیلیں۔

پاکستانی بولروں کی ابتدائی تین اوورز میں تین وکٹوں سے نیوزی لینڈ کی ٹیم آغاز میں دباؤ میں آئی لیکن چوتھی وکٹ کے لیے مارٹن گپٹل اور کورے اینڈرسن کے درمیان 46 رنز کی شراکت نے یہ دباؤ ختم کیا۔

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption کورے اینڈرسن کو ابتدا میں ہی محمد عرفان کے باؤنسر نےگڑبڑا دیا

بعدازاں رونکی اور اینڈرسن نے 51 رنز کی اہم شراکت قائم کی اور اپنی ٹیم کو بہتر سکور تک پہنچنے میں مدد دی۔

پاکستان کی جانب سے محمد عرفان اور سہیل تنویر نے دو، دو وکٹیں لیں جبکہ شاہد آفریدی، رضا حسن اور انور علی نے ایک ایک کھلاڑی کو آؤٹ کیا۔

ٹیسٹ سیریز میں ایک صفر کی برتری حاصل کرنے کے بعد دوسرا ٹیسٹ بمشکل برابر کرنے اور تیسرے ٹیسٹ میں اننگز کی شکست کا سامنا کرنے والی پاکستانی ٹیم کی حالیہ چند ماہ میں محدود اوورز کی کرکٹ میں کارکردگی کچھ اچھی نہیں رہی۔

نیوزی لینڈ کی آمد سے قبل متحدہ عرب امارات میں آسٹریلوی ٹیم نے اسے واحد ٹی 20 اور پھر ایک روزہ میچوں کی سیریز میں شکست دی تھی۔

پاکستان اور نیوزی لینڈ کے درمیان اب تک نو ٹی 20 میچ کھیلے جا چکے ہیں جن میں سے پاکستان نے چھ جیتے اور تین میں اسے شکست کا سامنا کرنا پڑا ہے۔

اسی بارے میں