کرائسٹ چرچ ٹیسٹ میں سری لنکا کو فالوآن

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption اگر بیٹنگ میں کپتان میک کلم نے نمایاں کردار ادا کیا تو بولنگ میں ٹم ساؤدی نے

نیوزی لینڈ کے شہر کرائسٹ چرچ میں کپتان برینڈن میک کلم کی ریکارڈ ساز اننگز کی بدولت نیوزی لینڈ کی ٹیم نے کھیل کے دوسرے روز اپنی پہلی اننگز میں 441 رنز بنائے جس کے جواب میں سری لنکا کی ٹیم 138 رنز کے معمولی سکور پر ڈھیر ہو گئی۔

کپتان میک کلم نے سری لنکا کو فالوآن کروا دیا ہے جس کے بعد سری لنکا نے دوسری اننگز کا اچھا آغاز کیا ہے اور دوسرے دن کے کھیل کے اختتام پر اس نے بغیر کسی نقصان کے 84 رنز بنا لیے تھے۔

کشال سلوا 33 اور کرونارتنے 49 رنز بنا کر کریز پر موجود ہیں۔

تازہ سکور کارڈ

اس سے قبل میچ کے پہلے دن کے کھیل کے اختتام پر نیوزی لینڈ نے سری لنکا کے خلاف سات وکٹوں پر 429 رنز بنائے تھے لیکن دوسرے دن ان کی اننگز جلد ہی سمٹ گئی۔

تاہم سری لنکا کی اننگز کا آغاز تباہ کن رہا اور 15 رنز کے سکور پر کمارا سنگاکارا سمیت اس کے تین وکٹیں گر چکی تھیں۔ کپتان اینجلو میتھیوز کے علاوہ کوئی بھی بلےباز نیوزی لینڈ کے بالز کے سامنے نہ ٹک سکا۔ میتھیوز نے 50 رنز بنائے۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption میک کلم 134 گیندوں پر 195 رنز کی جارحانہ اننگز کھیل کر آؤٹ ہوئے

نیوزی لینڈ کی جانب سے ٹرینٹ بولٹ اور نیل ویگنر نے تین تین وکٹ لیے جبکہ ٹم ساؤدی اور جیمز نیشم کے حصے میں دو دو وکٹیں آئیں۔

اس سے قبل کرائسٹ چرچ میں کھیلے جانے والے پہلے ٹیسٹ کے پہلے دن میک کلم پانچ رنز کی کمی سے ڈبل سنچری مکمل نہ کر سکے۔

وہ 134 گیندوں پر 195 رنز کی جارحانہ اننگز کھیل کر آؤٹ ہوئے۔ انھوں نے اس اننگز کے دوران 11 چھکے اور 18 چوکے لگائے۔

سری لنکن کپتان اینجلو میتھیوز نے ٹاس جیت کر بولروں کے موافق دکھائی دینے والی وکٹ پر میزبان ٹیم کو پہلے کھیلنے کی دعوت دی۔

ایک موقعے پر 88 کے مجموعی سکور پر تین کھلاڑی آؤٹ کر کے سری لنکن بولروں نے ان کا فیصلہ درست ثابت بھی کر دیا تھا۔

تاہم پھر میک کلم نے پہلے کین ولیمسن اور پھر جمی نیشم کے ساتھ مل کر جارحانہ انداز میں بلے بازی کی اور ٹیم کو مشکلات سے نکالا۔

اس دوران نیوزی لینڈ کے کپتان نے اپنی 11ویں سنچری 74 گیندوں پر مکمل کر کے نیوزی لینڈ کی جانب سے ٹیسٹ میچ میں تیز ترین سنچری کا اپنا ہی ریکارڈ توڑ ڈالا۔

اس سے قبل انھوں نےپاکستان کے خلاف گذشتہ ماہ شارجہ میں 78 گیندوں پر سنچری بنائی تھی۔

اپنی اس طوفانی اننگز کے دوران میک کلم ایک کیلینڈر ایئر میں ایک ہزار رنز بنانے والے نیوزی لینڈ کے پہلے بلے باز بھی بن گئے۔

انھوں نے سورنگا لکمل کے ایک اوور میں 26 رنز بنا کر سب سے زیادہ رنز کا ریکارڈ بھی برابر کیا۔ اس اوور میں میک کلم نے تین چھکے اور دو چوکے مارے۔

اپنی اننگز میں انھوں نے کل 11 چھکے لگائے اور کسی بلے باز کی جانب سے ٹیسٹ اننگز میں سب سے زیادہ چھکوں کی فہرست میں دوسرے نمبر پر رہے۔

ایک ٹیسٹ اننگز کے دوران سب سے زیادہ چھکے لگانے کا اعزاز پاکستان کے وسیم اکرم کو حاصل ہے جنھوں نے زمبابوے کے خلاف میچ میں ڈبل سنچری بناتے ہوئے 12 چھکے لگائے تھے۔

اسی بارے میں