کرکٹ میں مہندر سنگھ دھونی کے دس کارنامے

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption دھونی کی کپتانی میں بھارت نے سنہ 2011 میں 28 سال کے طویل انتظار کے بعد ایک روزہ کرکٹ کا عالمی کپ جیتا

بھارت کے معروف کرکٹر مہندر سنگھ دھونی نے ٹیسٹ کرکٹ سے ریٹائرمنٹ کا اعلان کر دیا ہے تاہم وہ ون ڈے اور ٹی ٹوئنٹی کرکٹ کھیلتے رہیں گے۔

لیکن ہم آپ کو مہندر سنگھ دھونی کے ٹیسٹ کیریئر سے منسلک دس خاص باتیں بتاتے ہیں۔

1. مہندر سنگھ دھونی نے بھارت کے لیے 90 ٹیسٹ میچوں میں 38 رنز کی اوسط سے چھ سنچریوں اور 33 نصف سنچریوں کی مدد سے 4,876 رنز بنائے۔ وہ بھارت کی جانب سے سب سے زیادہ ٹیسٹ کھیلنے والے وکٹ کیپر ہیں۔

2. ایک وکٹ کیپر کے طور پر دھونی نے 90 ٹیسٹ میچوں میں 256 کیچ پکڑے جبکہ 38 بیٹسمینوں کو سٹمپ آؤٹ کیا۔ ٹیسٹ میچ میں 294 شکار کے ساتھ دھونی دنیا کے پانچویں سب سے کامیاب وکٹ کیپر ہیں۔ اس فہرست میں جنوبی افریقہ کے مارک باؤچر 555 شکار کے ساتھ پہلے نمبر پر ہیں۔

3.دسمبر سنہ 2009 کے بعد بھارتی ٹیم مہندر سنگھ دھونی کی کپتانی میں پہلی بار ٹیسٹ کی عالمی درجہ بندی میں پہلے نمبر پر پہنچی۔

4. مہندر سنگھ دھونی نے بھارت کے لیے سب سے زیادہ 60 ٹیسٹ میچوں میں کپتانی کی ہے۔

5. ان کی کپتانی میں بھارت نے 27 ٹیسٹ میچ جیتے جبکہ بھارت کے سابق کپتان سارو گنگولی 21 ٹیسٹ میچ جیت کر دوسرے نمبر پر ہیں۔

6. دھونی کی کپتانی میں اپنی سرزمین پر کھیلے جانے والے ٹیسٹ میچوں میں بھارتی ٹیم کو 18 میں شکست کا سامنا کرنا پڑا جبکہ غیر ملکی دوروں میں بھارت نے 12 ٹیسٹ میچ ہارے اور 15 ڈرا ہوئے۔

7. دھونی کی کپتانی میں کھیلے جانے والے پہلے 11 ٹیسٹ میچوں میں بھارتی ٹیم ناقابلِ شکست رہی جو ایک ورلڈ ریکارڈ ہے۔ اس عرصے میں بھارتی ٹیم کو آٹھ ٹیسٹ میچوں میں فتح حاصل ہوئی جبکہ 3 ٹیسٹ ڈرا رہے۔

8. بھارت کی جانب سے ٹیسٹ میں کپتان کے طور پر سب سے بڑا سکور بنانے کا ریکارڈ ایم ایس دھونی کے نام ہے۔ انھوں نے سچن تندولکر کے 217 رنز کی اننگز کو پیچھے چھوڑتے ہوئے آسٹریلیا کے خلاف چنئی میں سنہ 2013 میں 224 رنز کی اننگز کھیلی۔

9. دھونی کی کپتانی میں بھارت نے سنہ 2011 میں 28 سال کے طویل انتظار کے بعد ایک روزہ کرکٹ کا عالمی کپ جیتا۔

10. بھارت نے مہندر سنگھ دھونی کی کپتانی میں سنہ 2007 میں ٹی ٹوئٹی کا عالمی کپ بھی جیتا تھا۔

اسی بارے میں