آسٹریلیا میں وراٹ کوہلی کے نئے ریکارڈز

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption وراٹ کوہلی نے آسٹریلیا میں 86 برس بعد یہ کارنامہ دہرایا ہے

بھارتی کرکٹ ٹیم کے کپتان وراٹ کوہلی آسٹریلیا کی سرزمین پر ٹیسٹ سیریز میں چار سنچریاں بنانے والے تیسرے غیر ملکی کرکٹر بن گئے ہیں۔

وراٹ کوہلی نے آسٹریلیا میں 86 برس بعد یہ کارنامہ دہرایا ہے۔

وراٹ کوہلی سے پہلے انگلینڈ کے والی ہیمنڈ نے سنہ 1929 میں اور ہربرٹ سٹیكلف نے سنہ 1925 میں یہ کارنامہ سرانجام دیا تھا۔

کوہلی نے آسٹریلیا کے خلاف ایڈیلیڈ ٹیسٹ کی دونوں اننگز میں سنچریاں سکور کی تھیں۔

انھوں نے پہلی اننگز میں 115 اور دوسری اننگز میں 143 رنز بنائے تھے۔

میلبرن ٹیسٹ میں کوہلی نے 169 رنز کی شاندار اننگز کھیلی تھی جبکہ سڈنی میں جاری چوتھے ٹیسٹ میچ میں بھی 147 رنز بنائے۔

انگلینڈ کی جانب سے دائیں ہاتھ سے کھیلنے والے بیٹسمین ہیمنڈ نے سنہ 29- 1928 کی سیریز کے دوران آسٹریلیا کے خلاف سیریز میں چار سنچریاں سکور کی تھیں۔

انھوں نے سڈنی میں 251 رنز، میلبرن میں 200 اور پھر سڈنی ٹیسٹ کی پہلی اننگز میں 119 ناٹ آؤٹ اور دوسری اننگز میں 177 رنز بنائے تھے۔

ہیمنڈ سے پہلے انگلینڈ ہی کے بیٹسمین ہربرٹ سٹیكلف نے آسٹریلیا کے خلاف سیریز میں 115 رنز، 176، 127 اور 143 رنز کی اننگز کھیلی تھیں۔

بھارتی ٹیم کے کپتان وراٹ کوہلی نے چار سنچریاں بنا كر برسوں پرانے سنیل گواسكر کے ایک ریکارڈ کو بھی برابر کر لیا ہے۔

بھارتی ٹیم کے سابق بیٹسمین سنیل گواسكر نے سنہ 1971 میں ویسٹ انڈیز کے خلاف پانچ ٹیسٹ میچوں کی سیریز میں چار سنچریاں بنائی تھیں۔

سڈنی ٹیسٹ میں سنچری سکور کر کے وہ سنیل گواسكر کے بعد ایک سیریز میں چار سنچریاں بنانے والے بھارت کے دوسرے بیٹسمین بن گئے ہیں۔

وراٹ کوہلی نے جو کارنامہ سرانجام دیا ہے وہ سچن تندولکر اور راہول ڈراوڑ جیسے بھارت کے بڑے کرکٹرز بھی نہیں کر پائے۔

ٹیسٹ کرکٹ میں وراٹ کوہلی کے کیریئر کی یہ 10 ویں سنچری ہے۔

کوہلی نے اپنے ٹیسٹ کیریئر میں جو 10 سنچریاں بنائیں ہیں ان میں سے چھ سنچریاں آ‎سٹریلیا کے خلاف ہیں۔

وراٹ کوہلی راہل ڈراوڑ کے بعد آسٹریلیا میں ایک ہی سیریز میں 500 سے زائد زنز بنانے والے دوسرے بیٹسمین بھی بن گئے ہیں۔

اس سے قبل سنہ 2003 اور 2004 کے دوران آ‎سٹریلیا میں کھیلی گئی سیریز میں راہول ڈراوڈ نے 500 سے زیادہ رنز سکور تھے۔

اسی بارے میں