سڈنی ٹیسٹ میں آسٹریلیا کو 348 رنز کی برتری

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption آسٹریلیا کو 348 رنز کی برتری حاصل ہو گئی ہے

سڈنی میں جاری چوتھے اور آخری ٹیسٹ میچ کے چوتھے دن کے اختتام پر آسٹریلیا نے بھارت کے خلاف دوسری اننگز میں چھ وکٹوں کے نقصان پر 251 رنز بنا لیے ہیں۔

جمعے کے بھارت نے پہلی اننگز میں 475 رنز بنائے تھے اور اس اسے آسٹریلیا کی پہلی اننگز میں 572 رنز کے جواب میں 97 رنز کے خسارے کا سامنا رہا۔

میچ کا تفصیلی سکور کارڈ

چوتھے دن کے کھیل کے اختتام پر ہائیڈن اور ہیرس کریز پر موجود تھے جبکہ سمتھ71 رنز بنا کر اب تک دوسری اننگز کے کامیاب بیٹسمین ہیں۔

اس سے پہلے بھارت کی جانب سے وراٹ کوہلی اور پراسنتا ساہا نے چوتھے دن کے کھیل کا آغاز کیا۔

آسٹریلیا کو میچ کے چوتھے دن پہلی کامیابی اس وقت ملی جب 352 رنز کے مجموعی سکور پر وراٹ کوہلی 147 رنز بنا کر آؤٹ ہوئے۔

383 رنز کے مجموعی سکور پر پراسنتا ساہا 35 رنز بنا کر آؤٹ ہو گئے۔ اس کے بعد 448 پر کمار اور 456 پر ایشون آؤٹ ہوئے اور آخری وکٹ 475 پر یادو کی گری۔

آسٹریلیا کی جانب سے مچل سٹارک نے تین ، شین واٹسن نے دو جبکہ نیتھن لائن نے دو، ہیزل وڈ نے ایک اور رائن ہیرس نے دو وکٹیں حاصل کیں۔

اس سے پہلے ٹیسٹ میچ کے دوسرے دن آسٹریلیا نے چائے کے وقفے پر سات وکٹ کے نقصان پر 572 رنز بنا کر اننگز ڈکلیئر کر دی تھی۔

آسٹریلیا کے پہلے چھ بیٹسمینوں نے کم از کم نصف سنچری سکور کی جو کہ آسٹریلیا کے لیے ایک ریکارڈ ہے۔

بھارت کی جانب سے محمد شامی سب سے کامیاب بولر رہے۔ انھوں نے پانچ وکٹیں حاصل کیں جبکہ امیش یادو اور رامچندر ایشون نے ایک ایک کھلاڑی کو آؤٹ کیا۔

چار ٹیسٹ میچوں کی سریز میں آسٹریلیا کو دو صفر کی ناقابل تسخیر برتری حاصل ہے۔

میلبرن میں کھیلا جانے والا تیسرا ٹیسٹ ہار جیت کے فیصلے کے بغیر ختم ہو گیا تھا۔

برزبین میں کھیلے جانے والے دوسرے ٹیسٹ میں آسٹریلیا نے بھارت کو چار وکٹوں سے ہرا کر سیریز میں دو صفر کی برتری حاصل کی تھی۔

ایڈیلیڈ میں کھیلے جانے والے پہلے ٹیسٹ میں آسٹریلیا نے بھارت کو ایک سنسنی خیز مقابلے کے بعد 48 رنز سے شکست دے کر سیریز میں ایک صفر کی برتری حاصل کی تھی۔

اسی بارے میں