جنید خان فٹنس ٹیسٹ میں ناکام، ورلڈ کپ سے باہر

تصویر کے کاپی رائٹ Reuters
Image caption جنید خان خاصے عرصے سے فٹنس مسائل کا شکار رہے ہیں

پاکستان کے فاسٹ بولر جنید خان ان فٹ ہونے کے سبب آسٹریلیا اور نیوزی لینڈ میں ہونے والے کرکٹ ورلڈ کپ میں شرکت نہیں کر سکیں گے۔

پاکستان کرکٹ بورڈ کے ترجمان نے بی بی سی کو بتایا کہ جنید خان پیر کو پاکستان کرکٹ بورڈ کی جانب سے لیا گیا فٹنس ٹیسٹ پاس نہ کر سکے۔

جنید کو ورلڈ کپ کے لیے پاکستان کے 15 رکنی سکواڈ میں شامل کیا گیا تھا تاہم وہ دورۂ نیوزی لینڈ سے قبل تربیتی کیمپ کے دوران ہیمسٹرنگ کی تکلیف میں مبتلا ہوگئے تھے۔

کرکٹ بورڈ کے حکام نے انھیں اس چوٹ کی وجہ سے نیوزی کے دورے پر نہیں بھیجا تھا لیکن ان کا نام عالمی کپ کے سکواڈ میں برقرار رکھا گیا تھا۔

حکام نے اس وقت کہا تھا کہ جنید کی فٹنس دیکھنے کے بعد یہ فیصلہ کیا جائے گا کہ وہ ورلڈ کپ کھیل سکتے ہیں یا نہیں۔

پیر کو لاہور میں جنید خان کی فٹنس ٹیسٹ لیا گیا تاہم وہ یہ ٹیسٹ کلیئر نہ کر سکے اور سلیکٹروں کو مطمئن کرنے میں ناکام رہے۔

اب پاکستان کرکٹ بورڈ کو آئی سی سی کی ٹیکنیکل کمیٹی سے ان کی جگہ کسی دوسرے فاسٹ بولر کی ورلڈ کپ ٹیم میں شمولیت کے لیے درخواست کرنی پڑے گی۔

جنید خان خاصے عرصے سے فٹنس مسائل کا شکار رہے ہیں۔

جنید خان نے 48 ون ڈے میچوں میں 75 وکٹیں حاصل کی ہیں۔ وہ متحدہ عرب امارات میں آسٹریلیا کے خلاف ون ڈے سیریز کھیلنے والی پاکستانی ٹیم میں شامل تھے لیکن دائیں گھٹنے کی تکلیف کے سبب وہ وطن واپس آنے پر مجبور ہو گئے تھے جس کے بعد وہ نیوزی لینڈ کے خلاف سیریز بھی نہ کھیل سکے۔

وہ آخری بار گذشتہ سال سری لنکا کے دورے میں کھیلے تھے اور کولمبو ٹیسٹ میں انھوں نے پانچ وکٹیں حاصل کی تھیں۔اسی دورے میں وہ دو ون ڈے بھی کھیلے تھے۔

جنید خان کا ان فٹ ہوکر عالمی کپ سے باہر ہوجانا پاکستانی ٹیم کے لیے بہت بڑا دھچکہ ہے کیونکہ ان سے قبل آف سپنر سعید اجمل بھی مشکوک بولنگ ایکشن کے سبب ورلڈ کپ نہیں کھیل رہے ہیں، جبکہ محمد حفیظ کا بولنگ کرنا بھی ان کے بولنگ ایکشن کے کلیئر ہونے سے مشروط ہے۔

ورلڈ کپ میں پاکستان کا پہلا میچ 15 فروری کو بھارت کے خلاف ایڈیلیڈ میں ہے۔

اسی بارے میں