’بدکلامی کرنے والے جرمانوں اور معطلی کے لیے تیار رہیں‘

تصویر کے کاپی رائٹ Reuters
Image caption حالیہ سہ فریقی سیریز کے دوران آسٹریلوی اوپنر ڈیوڈ وارنر کو بھارتی بلے باز روہت شرما پر طنز کرنے پر جرمانے کا سامنا کرنا پڑا تھا

کرکٹ کی عالمی تنظیم کا کہنا ہے کہ 2015 کے ورلڈ کپ مقابلوں میں حد سے زیادہ بدکلامی کرنے والے کھلاڑیوں کو بھاری جرمانوں اور پابندی کا سامنا کرنا پڑ سکتا ہے۔

یہ ٹورنامنٹ جمعے سے آسٹریلیا اور نیوزی لینڈ میں شروع ہو رہا ہے اور آئی سی سی کے سربراہ ڈیوڈ رچرڈسن نے کہا ہے ’اس مرتبہ سزائیں ماضی کے مقابلے میں زیادہ سخت ہوں گی۔‘

ان کا کہنا ہے کہ ’پہلی غلطی پر آپ کو جرمانہ ہوگا اور کوئی کھلاڑی اپنی بیشتر میچ فیس سے ہاتھ دھونا پسند نہیں کرتا۔‘

ڈیوڈ رچرڈسن نے کہا کہ اگر یہ رویہ دہرایا گیا تو’سزا معطلی کی صورت میں ملے گی۔‘

ان کا کہنا تھا کہ آئی سی سی اپنے اس نمائندہ ٹورنامنٹ سے قبل ہی کھلاڑیوں کی بدکلامی کے مسئلے سے نمٹنے کے لیے کوشاں رہی ہے اور ’جن کھلاڑیوں پر ماضی میں یہ الزام ثابت ہو چکا ہے اگر انھوں نے مزید ایسا کیا تو انھیں معطل کر دیا جائے گا۔‘

آئی سی سی کے سربراہ کا یہ بھی کہنا تھا کہ ’کچھ میچوں میں کھلاڑیوں کا رویہ قابلِ قبول نہیں تھا اور وہ نوجوان اور کم عمر شائقین کے لیے اچھی مثال قائم نہیں کر رہے تھے۔‘

انھوں نے بتایا کہ گذشتہ چند ماہ کے دوران کھیلی جانے والی بین الاقوامی سیریز میں 12 یا 13 کھلاڑیوں پر اس سلسلے میں جرمانے عائد کیے گئے جس سے ظاہر ہے کہ ’کریک ڈاؤن شروع ہو چکا ہے۔‘

خیال رہے کہ آسٹریلیا میں ہی حالیہ سہ فریقی سیریز کے دوران آسٹریلوی اوپنر ڈیوڈ وارنر کو اس وقت جرمانے کا سامنا کرنا پڑا تھا جب انھوں نے بھارتی بلے باز روہت شرما سے کہا تھا کہ ’انگریزی میں بات کرو۔‘

اسی بارے میں