ورلڈ کپ میں اپنے پہلے میچ میں افغانستان کو شکست

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption مشرفی مرتضٰی نے پہلے ہی اوور میں وکٹ لی

کرکٹ کے ورلڈ کپ مقابلوں میں بدھ کو گروپ اے کے میچ میں بنگلہ دیش نے افغانستان کو 105 رنز سے شکست دے دی ہے۔

آسٹریلوی دارالحکومت کینبرا میں کھیلے جانے والے میچ میں 268 رنز کے ہدف کے تعاقب میں افغانستان کی ٹیم 43ویں اوور میں 162 رنز بنا کر آؤٹ ہوگئی۔

میچ کا تفصیلی سکور کارڈ

ورلڈ کپ کا پانچواں دن: تصاویر میں

افغانستان میں اننگز کے ابتدائی تین اوورز میں ہی تین وکٹوں کا نقصان اٹھانا پڑا جس کے بعد افغان بلے باز انتہائی محتاط انداز میں کھیلے۔

اس محتاط انداز کی وجہ سے جہاں رنز بنانے کی رفتار سست رہی وہیں وقفے وقفے سے گرنے والی وکٹوں نے افغانستان کے لیے ہدف کا حصول ناممکن بنا دیا۔

افغانستان کی جانب سے کپتان محمد نبی اور سمیع اللہ شنواری نے کچھ مزاحمت کی اور 44 اور 42 رنز کی اننگز کھیلیں۔

بنگلہ دیش کے لیے مشرفی مرتضیٰ تین وکٹوں کے ساتھ سب سے کامیاب بولر رہے۔

تصویر کے کاپی رائٹ EPA
Image caption بنگلہ دیشی اوپنرز نے سست روی سے بلے بازی کی

ان کے علاوہ شکیب الحسن نے دو وکٹیں لیں۔

اس سے قبل بدھ کی صبح بنگلہ دیشی کپتان مشرفی مرتضیٰ نے ٹاس جیت کر پہلے کھیلنے کا فیصلہ کیا تو بنگلہ دیشی ٹیم 50ویں اوور کی آخری گیند پر 267 رنز بنا کر آؤٹ ہوگئی۔

بنگلہ دیشی اننگز کی خاص بات شکیب الحسن اور مشفق الرحیم کی نصف سنچریاں تھیں۔ ان دونوں نے بالترتیب 63 اور 71 رنز کی اننگز کھیل کر ٹیم کو ایک بہتر سکور تک پہنچنے میں مدد دی۔

اننگز میں زیادہ تر سست روی سے بلے بازی کے برعکس بیٹنگ پاور پلے میں بنگلہ دیشی بلے بازوں نے جارحانہ انداز میں بلے بازی کی اور یہ انداز اننگز کے آخر تک برقرار رہا۔

افغانستان کی جانب سے تمام بولروں نے اچھی کارکردگی دکھائی اور میر واعظ اشرف، شاہپور زدران، حامد حسن اور آفتاب عالم نے دو، دو وکٹیں لیں۔

تصویر کے کاپی رائٹ AP
Image caption میر واعظ اشرف سمیت چار افغان بولرز نے دو، دو وکٹیں لیں

افغان سپنر سمیع شنواری اس میچ میں اپنے دس اوور نہ کر سکے کیونکہ اننگز کے 33ویں اوور میں امپائر نے گیند کروانے کے بعد پچ پر دوڑنے پر ان پر پابندی لگا دی اور ان کا اوور جاوید احمدی نے پورا کروایا۔

یہ دونوں ٹیمیں ماضی میں صرف ایک بار 2014 کے ایشیا کپ میں مدِمقابل آ چکی ہیں جہاں افغانستان نے بنگلہ دیش کو اس کے ہوم گراؤنڈ پر شکست دے کر سب کو حیران کر دیا تھا۔

افغانستان کی ٹیم پہلی بار کرکٹ کے ورلڈ کپ مقابلوں میں حصہ لے رہی ہے جبکہ بنگلہ دیش کا یہ پانچواں ورلڈ کپ ہے۔

بنگلہ دیش نے 1999 میں اپنے پہلے ورلڈ کپ میں پاکستانی جیسی مضبوط ٹیم کو ہرایا تھا لیکن وہ آج تک چار میں سے صرف ایک بار 2007 کے ورلڈ کپ میں ہی سپر ایٹ مرحلے تک پہنچ پائی ہے۔

اسی بارے میں