کرکٹ ورلڈ کپ: پہلے پانچ میچوں میں نیا ریکارڈ

تصویر کے کاپی رائٹ GETTY IMAGES
Image caption دلچسپ بات یہ ہے کہ عالمی کپ کے ابتدائی پانچ میچوں میں پہلے بلے بازی کرنے والی تمام ٹیموں نے 300 سے ذیادہ رنز بنائے ہیں جو کہ نیا ریکارڈ ہے

کرکٹ ورلڈ کپ کی تاریخ میں اب تک اتنے رنز کبھی نہیں بنے جتنے اس بار بن رہے ہیں۔

بلے باز رنز بناتے چلے جا رہے ہیں اور بولرز کی خوب دھلائی ہو رہی ہے۔

دلچسپ بات یہ ہے کہ عالمی کپ کے ابتدائی پانچ میچوں میں پہلے بلے بازی کرنے والی تمام ٹیموں نے 300 سے یادہ رنز بنائے ہیں جو کہ نیا ریکارڈ ہے۔

1975 میں ہونے والے کرکٹ کے پہلے عالمی مقابلوں میں صرف چار میچوں کی پہلی اننگ میں 300 سے زیادہ رنز بنے تھے جبکہ اس وقت ایک روزہ میچوں میں مقررہ اوورز کے تعداد 60 ہوا کرتی تھی۔

تصویر کے کاپی رائٹ AP
Image caption کرکٹ کا دوسرا ورلڈ کپ جو 1979 میں ہوا تھا کوئی بھی ٹیم 300 رنز نہیں بنا پائی تھی جبکہ 1983 میں ہونے والے تیسرے عالمی کپ میں بھی چار ہی ٹیمیں 300 یا اس سے زیادہ رنز بنا سکی تھیں

کرکٹ کا دوسرا عالمی کپ جو 1979 میں ہوا تھا جس میں کوئی بھی ٹیم 300 رنز نہیں بنا پائی تھی جبکہ 1983 میں ہونے والے تیسرے عالمی کپ میں بھی صرف چار ٹیمیں 300 یا اس سے زیادہ رنز بنا سکی تھیں۔

1987 میں پاکستان اور بھارت نے مشترکہ طور پر عالمی کپ کی میزبانی کی۔ ان عالمی مقابلوں میں 300 سے زائد رنز بنانے والی ٹیموں کی تعداد دو تھی۔

تصویر کے کاپی رائٹ REUTERS
Image caption میں دو بار، 1996 میں پانچ بار ، 1999 میں دو بار ، 2003 میں نو بار، 2007 میں 16 بار اور 2011 میں 17 بار ایک اننگز میں 300 رنز یا اس سے زیادہ کا سکور بنا

1992 میں دو بار، 1996 میں پانچ بار ، 1999 میں دو بار ، 2003 میں نو بار، 2007 میں 16 بار اور 2011 میں 17 بار ایک اننگز میں 300 رنز یا اس سے زیادہ کا سکور بنا۔

1992 میں آسٹریلیا اور نیوزی لینڈ کی سرزمین پر ہوئے ورلڈ کپ میں صرف دو ٹیمیں ہی 300 رنز سے زیادہ کا سکور بنا سکی تھی. وہ بھی ایک ہی میچ میں۔

زمبابوے نے 4 وکٹ پر 312 رنز بنائے تھے، جواب میں سری لنکا نے 7 وکٹ پر 313 رنز بنا کر میچ جیت لیا تھا۔

اسی بارے میں