’معین خان کو فوری طور پر واپس بلوا لیا گیا ہے‘

تصویر کے کاپی رائٹ AP
Image caption معین خان پر الزام ہے کہ وہ ورلڈ کپ میں ویسٹ انڈیز کے خلاف میچ سے قبل کرائسٹ چرچ کے جوا خانے میں گئے تھے

پاکستان کرکٹ بورڈ کے چیئرمین شہر یار خان نے کہا کہ پاکستانی کرکٹ ٹیم کے چیف سلیکٹر معین خان کو فوراً وطن واپس بلوا لیا ہے۔

لاہور میں میڈیا سے بات کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ معین خان کے مطابق وہ اپنی بیوی کے ساتھ کسینو میں کھانا کھانے گئے تھے۔

شہر یار خان کے مطابق معین خان کے کسینو کھانا کھانے جانے اور واپس آنے سے ٹیم پر اثر نہیں ہو گا۔

کرکٹ بورڈ کے چیئر مین کا کہنا تھا کہ معین خان کی جگہ نوید اکرم چیمہ چیئرمین سلیکشن کمیٹی ہوں گے۔

واضح رہے کہ معین خان پر الزام ہے کہ وہ ورلڈ کپ میں ویسٹ انڈیز کے خلاف میچ سے قبل کرائسٹ چرچ کے جوا خانے میں گئے تھے۔

عام طور پر کرکٹرز کے خلاف انضباطی کارروائی کرکے انھیں وطن واپس بلایا جاتا ہے لیکن پاکستانی کرکٹ میں کسی آفیشل کو دورے سے واپس بلائے جانے کا یہ پہلا واقعہ ہے۔

پاکستان کرکٹ بورڈ کے چیئر مین شہر یارخان بی بی سی اردو سروس کو بتایا کہ معین خان کو فوری طور پر وطن واپس بلایا جا رہا ہے اور ان کے آنے کے بعد ان سے ان کے جوا خانے میں جانے کے واقعے کے بارے میں مزید بات کی جائے گی۔

شہر یار خان نے کہا کہ معین خان نے یہ تسلیم کر لیا ہے کہ وہ جوا خانے (کسینو) گئے تھے لیکن بقول وہ جوا کھیلنے نہیں بلکہ کھانا کھانے گئے تھے۔

پاکستان کرکٹ بورڈ کے چیئر مین شہر یار خان نے پیر کو معین خان کو فون کرکے ان کے مبینہ طور پر جوا خانے میں جانے کے بارے میں ذرائع ابلاغ میں سامنے آنے والی خبروں کی وضاحت طلب کی تھی۔

پاکستان کرکٹ بورڈ نے پاکستانی ٹیم کے منیجر نوید اکرم چیمہ سے بھی اس بارے میں تفصیلات معلوم کی تھیں۔

بھارت اور ویسٹ انڈیز کے خلاف شکست کے بعد پاکستان بھر میں ٹیم کے بارے میں شدید ردعمل پایا جاتا ہے ایسے میں مبینہ طور پر معین خان کے جوا خانے میں جانے کے واقعے نے جلتی پہ تیل کا کام کیا ہے۔

معین خان ورلڈ کپ میں پاکستانی ٹیم کا باضابطہ حصہ نہیں ہیں۔ وہ چیف سلیکٹر کی حیثیت سے ٹیم کے ساتھ سفر کر رہے ہیں تاہم وہ آئی سی سی کے قواعد وضوابط کے مطابق ڈریسنگ روم میں تمام وقت نہیں بیٹھ سکتے۔

اسی بارے میں