ورلڈ کپ میں عمدہ کارکردگی، کرکٹر پر دائر مقدمہ واپس

روبیل حسین تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption روبیل حسین کا موقف ہے کہ مدعی اداکارہ انھیں بلیک میل کر رہی ہے۔

بنگلہ دیش میں ایک فلمی اداکارہ نے کرکٹ ورلڈ کپ میں عمدہ کارکردگی دکھانے پر قومی کرکٹر روبیل حسین کے خلاف دائر کردہ ریپ کا مقدمہ واپس لے لیا۔

روبیل کی سابق گرل فرینڈ نازنین اختر نے ان پر الزام لگایا تھا کہ انھوں نے شادی کا جھانسہ دے کر ان سے جنسی تعلق قائم کیا تھا۔

روبیل نے انگلینڈ کے خلاف میچ میں چار وکٹیں لے کر اپنی ٹیم کو کوارٹر فائنل مرحلے میں پہنچانے میں اہم کردار ادا کیا تھا۔

ان کی یہ کارکردگی دیکھنے کے بعد نازنین نے مقدمہ واپس لینے کا فیصلہ کیا۔

19 سالہ نازنین کا کہنا ہے کہ وہ نہیں چاہتیں روبیل اس مقدمے کی وجہ سے ورلڈ کپ کے دوران کسی دباؤ کا شکار ہوں۔

خیال رہے کہ روبیل کو اس مقدمے میں گرفتار کر کے جیل بھیجا گیا تھا اور انھیں ورلڈ کپ کے اختتام تک کے لیے ضمانت پر رہائی ملی تھی۔

بنگلہ دیش میں جب کوئی ریپ کا الزام لگاتا ہے تو اس کا نام ظاہر نہیں کیا جاتا لیکن نازنین باقاعدہ میڈیا سے بات کرتی رہیں ہیں۔

انھوں نے روبیل کے خلاف دسمبر میں مقدمہ دائر کیا تھا اور کہا تھا کہ ان کے تعلقات اس وقت ختم ہو گئے تھے جب روبیل شادی کے وعدے سے مکر گئے تھے۔

انھوں نے رپورٹرز سے یہ بھی کہا تھا کہ اگر حسین شادی کے لیے رضامند ہو جاتے ہیں تو وہ اپنے الزامات واپس لے لیں گی۔

نازنین ہیپی ابھی تک صرف ایک بنگلہ دیشی فلم میں کام کر پائی ہیں جو ستمبر 2013 میں ریلیز ہوئی تھی۔

اس کیس پر بنگلہ دیش میں بہت دلچسپی لی جا رہی ہے کیونکہ شادی سے پہلے سیکس کی بات پبلک میں کرنا بنگلہ دیش میں ایک ممنوع موضوع ہے۔

اسی بارے میں