جنوبی افریقہ نے متحدہ عرب امارات کو 146 رنز سے شکست دے دی

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption ڈی ویلیئرز نے ایک بار پھر عمدہ بیٹنگ کی اور 82 گیندوں میں چھ چوکوں اور چار چھکوں کی مدد سے 99 رنز بنائے۔ ان کا کیچ امجد جاوید نے کامران شہزاد کی گیند پر پکڑا

نیوزی لینڈ کے شہر ویلنگٹن میں کرکٹ ورلڈ کپ میں پول بی کے کھیلے جانے والے میچ میں جنوبی افریقہ نے متحدہ عرب امارات کو 146 رنز سے شکست دے دی ہے۔

جنوبی افریقہ نے مقررہ 50 اوورز میں چھ وکٹوں کے نقصان پر 341 رنز بنائے جبکہ جواب میں متحدہ عرب امارات کی ٹیم 47.3 اوورز میں 195 رنز بنا کر آؤٹ ہو گئی۔

متحدہ عرب امارات نے ٹاس جیت کر جنوبی افریقہ کو پہلے کھیلنے کی دعوت دی۔

میچ کا تفصیلی سکور کارڈ

متحدہ عرب امارت کی جانب سے پٹیل نے عمدہ بیٹنگ کی اور 100 گیندوں میں 57 رنز بنائے اور آؤٹ نہیں ہوئے۔

جنوبی افریقہ کی جانب سے فلینڈر، مورکل اور ڈی ویلییرز نے دو دو جبکہ سٹین، ڈومینی اور عمران نے ایک ایک وکٹ حاصل کی۔

متحدہ عرب امارات کی پہلی وکٹ 29 کے مجموعی سکور پر گری جب روس نے بائیں ہاتھ پر ڈائیو مارتے ہوئے مورکل کی گیند پر بیرینجر کا شاندار کیچ پکڑا۔

دوسری وکٹ 45 کے مجموعی سکور پر گری جب امجد علی 21 رنز بنا کر ڈومینی کے ہاتھوں آؤٹ ہوئے۔

مورکل نے اپنی دوسری وکٹ خرم خان کو آوٹ کر کے لی۔ خرم نے 12 رنز بنائے۔

انور نے اچھا کھیل پیش کیا اور 64 گیندوں میں 39 رنز بنائے ان کو عمران طاہر نے آؤٹ کیا۔

متحدہ عرب امارات کی پانچویں وکٹ 118 کے مجموعی سکور پر گری جب ڈی ویلیئرز کی گیند پر روسو نے کیچ پکڑ کے ثقلین حیدر کو آؤٹ کیا۔

امجد جاوید صرف پانچ رنز بنا کر آؤٹ ہوئے جبکہ محمد نوید نے 17 رنز سکور کیے۔

آٹھویں وکٹ 189 کے مجموعی سکور پر گری جب محمد توقیر تین رنز بنا کر سٹین کی گیند پر بولڈ ہوئے۔

اس سے قبل جنوبی افریقہ کی جانب سے ڈی ویلییرز نے 82 گیندوں میں 99 رنز بنائے جبکہ بہار دین نے 31 گیندوں میں پانچ چوکوں اور تین چھکوں کی مدد سے 64 رنز بنائے۔

جمعرات کو کھیلے جانے والے میچ میں ہاشم آملہ اور کوئنٹن ڈی کاک نے اننگز شروع کی اور جنوبی افریقہ کو 17 رنز کا آغاز دیا۔

اس موقع پر نوید خان نے آملہ کو آؤٹ کر کے اماراتی ٹیم کو پہلی کامیابی دلوائی۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption رائلی روسو نے جارحانہ انداز اپنایا اور متعدد اچھی شاٹس کھیلیں۔

آملہ پہلے ہی اوور میں ایک خطرناک گیند ہاتھ پر لگنے کے بعد کچھ ڈرے ڈرے نظر آئے اور جلد ہی آؤٹ ہوگئے۔

ہاشم کی پویلین واپسی کے بعد روسو نے جارحانہ انداز اپنایا اور متعدد اچھی شاٹس کھیلیں۔ انھوں نے کوئنٹن ڈی کاک کے ساتھ مل کر 68 رنز کی شراکت قائم کی۔

اس شراکت کو امجد جاوید نے ڈی کاک کو وکٹوں کے پیچھے کیچ کروا کے توڑا۔ فیلڈ امپائر نے انھیں آؤٹ نہیں دیا لیکن ریویو پر فیصلہ اماراتی ٹیم کے حق میں رہا۔

جنوبی افریقہ کی جانب سے ڈی ویلیئرز اور ڈیوڈ ملر نے 108 رنز کی شراکت کی۔ اس شراکت کو نوید نے توڑا جب انھوں نے ملر کو بولڈ کیا۔ ڈیوڈ ملر نے 48 گیندوں میں 49 رنز بنائے۔

تصویر کے کاپی رائٹ Reuters
Image caption آملہ پہلے ہی اوور میں ایک خطرناک گیند ہاتھ پر لگنے کے بعد کچھ ڈرے ڈرے نظر آئے اور جلد ہی آؤٹ ہوگئے۔

ڈی ویلیئرز نے ایک بار پھر عمدہ بیٹنگ کی اور 82 گیندوں میں چھ چوکوں اور چار چھکوں کی مدد سے 99 رنز بنائے۔ ان کا کیچ امجد جاوید نے کامران شہزاد کی گیند پر پکڑا۔

متحدہ عرب امارات کی جانب سے محمد نوید نے تین جبکہ کامران شہزاد، امجد جاوید اور محمد توقیر نے ایک ایک وکٹ حاصل کی۔

اس میچ کے لیے جنوبی افریقہ نے اپنی ٹیم میں دو تبدیلیاں کی ہیں اور فاف ڈوپلیسی کی جگہ فرحان بہاردین کو پھر موقع ملا ہے جبکہ کائل ایبٹ کی جگہ ویرون فیلنڈر یہ میچ کھیل رہے ہیں۔

اماراتی ٹیم میں بھی تین تبدیلیاں کی گئی ہیں اور فہد الہاشمی، کامران شہزاد اور ثقلین حیدر کو ٹیم میں شامل کیا گیا ہے۔

جنوبی افریقہ کی ٹیم اس وقت پول بی میں دوسرے نمبر پر ہے اور اس میچ میں فتح کی صورت میں وہ کوارٹر فائنل مرحلے میں جگہ بنا لے گی۔

متحدہ عرب امارات کی ٹیم اس پول کی واحد ٹیم ہے جسے اب تک ہر میچ میں شکست ہوئی ہے۔

یہ دونوں ٹیمیں ماضی میں صرف ایک بار 1996 کے ورلڈ کپ میں سامنے آئی تھیں اور جنوبی افریقہ نے گیری کرسٹن کی 188 رنز کی اننگز کی بدولت باآسانی فتح حاصل کی تھی۔

اسی بارے میں