بنگلہ دیش کو شکست دے کر بھارت سیمی فائنل میں

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption اس ٹورنامنٹ میں بھارت کی ٹیم ناقابلِ شکست ہے

آسٹریلوی شہر میلبرن میں کرکٹ ورلڈ کپ کے دوسرے کوارٹر فائنل میچ میں بنگلہ دیش کو 109 رنز سے شکست دے کر بھارت سیمی فائنل میں پہنچ گیا ہے۔

بھارت نے ٹاس جیت کر پہلے بیٹنگ کرتے ہوئے بنگلہ دیش کو 303 رنز کا ہدف دیا اور جواب میں بنگلہ دیش کی ٹیم 45 اوورز میں 193 رنز بنا کر آؤٹ ہو گئی۔

میچ کا تفصیلی سکور کارڈ

جمعرات کو کھیلے جانے والے میچ میں بنگلہ دیشی اوپنروں نے ٹیم کو 33 رنز کا آغاز دیا لیکن اس کے بعد دونوں اوپنر تمیم اقبال اور امرو القیس یکے بعد دیگرے آؤٹ ہو گئے۔

تمیم کو امیش یادو نے کیچ کروایا جبکہ امرو القیس رن آؤٹ ہوئے۔

تیسری وکٹ کے لیے سومیا اور محمود اللہ نے 40 رنز بنائے اور اس شراکت کا خاتمہ محمد شامی نے سومیا کو آؤٹ کر کے کیا۔ شامی نے ہی محمود اللہ کو بھی پویلین کی راہ دکھلائی۔

تصویر کے کاپی رائٹ Reuters
Image caption سریش رائنا اور روہت شرما نے عمدگی سے کھیلتے ہوئے بھارت کو مستحکم پوزیشن تک پہنچا دیا

شکیب الحسن دس رنز بنا سکے اور جدیجا کی گیند پر آؤٹ ہوئے۔ مشفق الرحیم کو آؤٹ کر کے امیش یادو نے اپنی دوسری وکٹ حاصل کی۔

189 کے مجموعی سکور پر بنگلہ دیش کی ساتویں وکٹ ناصر حسین کی صورت میں گری جنھیں جدیجا نے آؤٹ کیا۔

ٹیم کے سکور میں محض تین رنز کے اضافے کے مشرف مرتضیٰ ایک رن بنا کر شرما کی گیند پر وکٹ کیپر کے ہاتھوں کیچ آؤٹ ہو گئے۔

بنگلہ دیش کی آخری دونوں وکٹیں 193 رنز گریں اور 45 اوورز میں ساری ٹیم آؤٹ ہو گئی۔

اس سے قبل بھارت نے ٹاس جیت کر پہلے کھیلنے کا فیصلہ کیا اور روہت شرما کی عمدہ اننگز کی بدولت مقررہ 50 اوورز میں چھ وکٹوں کے نقصان پر 302 رن بنائے۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption روہت شرما نے دس چوکوں اور ایک چھکے کی مدد سے سنچری بنائی

روہت شرما نے ایک روزہ کرکٹ میں اپنی ساتویں سنچری بنائی اور وہ 137 رنز کی اننگز کھیل کر تسکین احمد کی وکٹ بنے۔

ان کے علاوہ سریش رائنا نے بھی نصف سنچری بناتے ہوئے 65 رنز کی اہم اننگز کھیلی۔ انھوں نے روہت کے ساتھ مل کر چوتھی وکٹ کے لیے 122 رنز کی اہم شراکت قائم کی۔

بنگلہ دیش کی جانب سے تسکین احمد تین وکٹوں کے ساتھ سب سے کامیاب بولر رہے جبکہ روبیل حسین، مشرفی مرتضیٰ اور شکیب الحسن نے ایک ایک وکٹ لی۔

اس میچ کے لیے بھارتی ٹیم میں کوئی تبدیلی نہیں کی گئی جبکہ بنگلہ دیشی ٹیم میں کپتان مشرفی مرتضیٰ کی واپسی ہوئی۔

تصویر کے کاپی رائٹ GETTY IMAGES
Image caption میدان میں بنگلہ دیش کے حامیوں کی بھی بڑی تعداد موجود ہے

اس ٹورنامنٹ میں بھارت کی ٹیم ناقابلِ شکست ہے۔ اس نے پول بی میں اپنے چھ کے چھ میچ جیت کر پہلی پوزیشن حاصل کی تھی۔

بنگلہ دیش کی ٹیم پول اے میں چوتھے نمبر پر رہی تھی اور اس نے پہلی بار ورلڈ کپ میں آخری آٹھ ٹیموں میں جگہ بنائی۔

اس میچ سے پہلے بنگلہ دیش اور بھارت کی ٹیمیں ماضی میں 13 مرتبہ ایک روزہ میچوں میں مدِمقابل آ چکی ہیں اور صرف ایک میچ میں بنگلہ دیشی ٹیم فتح حاصل کر پائی۔

اسی بارے میں