’بھارت ورلڈ کپ سے پہلے کی شکستوں کو یاد رکھے‘

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption وہ ایک بھی میچ نہیں جیت پائے تھے۔ امید ہے کہ یہ بات ان دل و دماغ میں واضح ہوگی: میکسویل

بھارت اور آسٹریلیا کے درمیان کرکٹ کے عالمی کپ کے سیمی فائنل میں تو ابھی چند دن باقی ہیں لیکن میچ سے پہلے نفسیاتی برتری حاصل کرنے کے لیے بیان بازی کا سلسلہ شروع ہوگیا ہے۔

جارحانہ بلے بازی کےلیے مشہور آسٹریلیا کے گلین میكسویل نے کہا ہے کہ بھارتی ٹیم کو یہ نہیں بھولنا چاہیے کہ ورلڈ کپ سے پہلے ہونے والی سیریز میں وہ ان کی ٹیم کے خلاف ایک بھی میچ نہیں جیت پائے تھی۔

میكسویل نے کہا کہ جمعرات کو ہونے والے ورلڈ کپ کے سیمی فائنل میں بھی آسٹریلیا کی ٹیم اپنی جیت کا یہ سلسلہ جاری رکھے گی۔

26 مارچ کو سڈنی میں ہونے والے دوسرے سیمی فائنل میں بھارت اور آسٹریلیا کا مقابلہ ہوگا۔

بھارت نے بنگلہ دیش اور آسٹریلیا نے پاکستان کو ہرا کر سیمی فائنل میں جگہ بنائی ہے۔

اس سوال پر کہ ابھی تک اس عالمی کپ میں ناقابلِ شکست رہنے والی بھارتی ٹیم کو روکنا کتنا مشکل ہو گا، میكسویل نے کہا، ’ہم نے حال ہی میں انہیں اچھا خاصا نشانہ بنایا تھا۔ وہ ایک بھی میچ نہیں جیت پائے تھے۔ امید ہے کہ یہ بات ان دل و دماغ میں واضح ہوگی۔‘

تاہم میكسویل نے اس ورلڈ کپ میں بھارتی ٹیم کی کارکردگی کی تعریف بھی کی۔ انھوں نے کہا، ’بھارتی ٹیم بہت اچھی ہے۔ اگر وہ اچھے نہیں ہوتے، تو سیمی فائنل تک نہیں پہنچتے۔‘

میكسویل کا کہنا ہے کہ ورلڈ کپ سے پہلے جس حکمت عملی کے ساتھ آسٹریلیا نے بھارت کا سامنا کیا تھا، ٹیم اسی منصوبہ بندی کے ساتھ سیمی فائنل کے موقع پر میدان میں اترے گی۔

اسی بارے میں